Project Description

AL WAQIAH

 شروع الله کا نام لے کر جو بڑا مہربان نہایت رحم والا ہے

۱  جب واقع ہونے والی واقع ہوجائے
۲  اس کے واقع ہونے میں کچھ جھوٹ نہیں
۳  کسی کو پست کرے کسی کو بلند
۴  جب زمین بھونچال سے لرزنے لگے
۵  اور پہاڑ ٹوٹ کر ریزہ ریزہ ہوجائیں
۶  پھر غبار ہو کر اُڑنے لگیں
۷  اور تم لوگ تین قسم ہوجاؤ
۸  تو داہنے ہاتھ والے (سبحان الله) داہنے ہاتھ والے کیا (ہی چین میں) ہیں
۹  اور بائیں ہاتھ والے (افسوس) بائیں ہاتھ والے کیا (گرفتار عذاب) ہیں
۱۰  اور جو آگے بڑھنے والے ہیں (ان کا کیا کہنا) وہ آگے ہی بڑھنے والے ہیں
۱۱  وہی (خدا کے) مقرب ہیں
۱۲  نعمت کے بہشتوں میں
۱۳  وہ بہت سے تو اگلے لوگوں میں سے ہوں گے
۱۴  اور تھوڑے سے پچھلوں میں سے
۱۵  (لعل و یاقوت وغیرہ سے) جڑے ہوئے تختوں پر
۱۶  آمنے سامنے تکیہ لگائے ہوئے
۱۷  نوجوان خدمت گزار جو ہمیشہ (ایک ہی حالت میں) رہیں گے ان کے آس پاس پھریں گے
۱۸  یعنی آبخورے اور آفتابے اور صاف شراب کے گلاس لے لے کر
۱۹  اس سے نہ تو سر میں درد ہوگا اور نہ ان کی عقلیں زائل ہوں گی
۲۰  اور میوے جس طرح کے ان کو پسند ہوں
۲۱  اور پرندوں کا گوشت جس قسم کا ان کا جی چاہے
۲۲  اور بڑی بڑی آنکھوں والی حوریں
۲۳  جیسے (حفاظت سے) تہہ کئے ہوئے (آب دار) موتی
۲۴  یہ ان اعمال کا بدلہ ہے جو وہ کرتے تھے
۲۵  وہاں نہ بیہودہ بات سنیں گے اور نہ گالی گلوچ
۲۶  ہاں ان کا کلام سلام سلام (ہوگا)
۲۷  اور داہنے ہاتھ والے (سبحان الله) داہنے ہاتھ والے کیا (ہی عیش میں) ہیں
۲۸  (یعنی) بےخار کی بیریوں
۲۹  اور تہہ بہ تہہ کیلوں
۳۰  اور لمبے لمبے سایوں
۳۱  اور پانی کے جھرنوں
۳۲  اور میوہ ہائے کثیرہ (کے باغوں) میں
۳۳  جو نہ کبھی ختم ہوں اور نہ ان سے کوئی روکے
۳۴  اور اونچے اونچے فرشوں میں
۳۵  ہم نے ان (حوروں) کو پیدا کیا
۳۶  تو ان کو کنواریاں بنایا
۳۷  (اور شوہروں کی) پیاریاں اور ہم عمر
۳۸  یعنی داہنے ہاتھ والوں کے لئے
۳۹  (یہ) بہت سے اگلے لوگوں میں سے ہیں
۴۰  اور بہت سے پچھلوں میں سے
۴۱  اور بائیں ہاتھ والے (افسوس) بائیں ہاتھ والے کیا (ہی عذاب میں) ہیں
۴۲  (یعنی دوزخ کی) لپٹ اور کھولتے ہوئے پانی میں
۴۳  اور سیاہ دھوئیں کے سائے میں
۴۴  (جو) نہ ٹھنڈا (ہے) نہ خوشنما
۴۵  یہ لوگ اس سے پہلے عیشِ نعیم میں پڑے ہوئے تھے
۴۶  اور گناہ عظیم پر اڑے ہوئے تھے
۴۷  اور کہا کرتے تھے کہ بھلا جب ہم مرگئے اور مٹی ہوگئے اور ہڈیاں (ہی ہڈیاں رہ گئے) تو کیا ہمیں پھر اُٹھنا ہوگا؟
۴۸  اور کیا ہمارے باپ دادا کو بھی؟
۴۹  کہہ دو کہ بےشک پہلے اور پچھلے
۵۰  (سب) ایک روز مقرر کے وقت پر جمع کئے جائیں گے
۵۱  پھر تم اے جھٹلانے والے گمرا ہو!
۵۲  تھوہر کے درخت کھاؤ گے
۵۳  اور اسی سے پیٹ بھرو گے
۵۴  اور اس پر کھولتا ہوا پانی پیو گے
۵۵  اور پیو گے بھی تو اس طرح جیسے پیاسے اونٹ پیتے ہیں
۵۶  جزا کے دن یہ ان کی ضیافت ہوگی
۵۷  ہم نے تم کو (پہلی بار بھی تو) پیدا کیا ہے تو تم (دوبارہ اُٹھنے کو) کیوں سچ نہیں سمجھتے؟
۵۸  دیکھو تو کہ جس (نطفے) کو تم (عورتوں کے رحم میں) ڈالتے ہو
۵۹  کیا تم اس (سے انسان) کو بناتے ہو یا ہم بناتے ہیں؟
۶۰  ہم نے تم میں مرنا ٹھہرا دیا ہے اور ہم اس (بات) سے عاجز نہیں
۶۱  کہ تمہاری طرح کے اور لوگ تمہاری جگہ لے آئیں اور تم کو ایسے جہان میں جس کو تم نہیں جانتے پیدا کر دیں
۶۲  اور تم نے پہلی پیدائش تو جان ہی لی ہے۔ پھر تم سوچتے کیوں نہیں؟
۶۳  بھلا دیکھو تو کہ جو کچھ تم بوتے ہو
۶۴  تو کیا تم اسے اُگاتے ہو یا ہم اُگاتے ہیں؟
۶۵  اگر ہم چاہیں تو اسے چورا چورا کردیں اور تم باتیں بناتے رہ جاؤ
۶۶  (کہ ہائے) ہم تو مفت تاوان میں پھنس گئے
۶۷  بلکہ ہم ہیں ہی بےنصیب
۶۸  بھلا دیکھو تو کہ جو پانی تم پیتے ہو
۶۹  کیا تم نے اس کو بادل سے نازل کیا ہے یا ہم نازل کرتے ہیں؟
۷۰  اگر ہم چاہیں تو ہم اسے کھاری کردیں پھر تم شکر کیوں نہیں کرتے؟
۷۱  بھلا دیکھو تو جو آگ تم درخت سے نکالتے ہو
۷۲  کیا تم نے اس کے درخت کو پیدا کیا ہے یا ہم پیدا کرتے ہیں؟
۷۳  ہم نے اسے یاد دلانے اور مسافروں کے برتنے کو بنایا ہے
۷۴  تو تم اپنے پروردگار بزرگ کے نام کی تسبیح کرو
۷۵  ہمیں تاروں کی منزلوں کی قسم
۷۶  اور اگر تم سمجھو تو یہ بڑی قسم ہے
۷۷  کہ یہ بڑے رتبے کا قرآن ہے
۷۸  (جو) کتاب محفوظ میں (لکھا ہوا ہے)
۷۹  اس کو وہی ہاتھ لگاتے ہیں جو پاک ہیں
۸۰  پروردگار عالم کی طرف سے اُتارا گیا ہے
۸۱  کیا تم اس کلام سے انکار کرتے ہو؟
۸۲  اور اپنا وظیفہ یہ بناتے ہو کہ (اسے) جھٹلاتے ہو
۸۳  بھلا جب روح گلے میں آ پہنچتی ہے
۸۴  اور تم اس وقت کی (حالت کو) دیکھا کرتے ہو
۸۵  اور ہم اس (مرنے والے) سے تم سے بھی زیادہ نزدیک ہوتے ہیں لیکن تم کو نظر نہیں آتے
۸۶  پس اگر تم کسی کے بس میں نہیں ہو
۸۷  تو اگر سچے ہو تو روح کو پھیر کیوں نہیں لیتے؟
۸۸  پھر اگر وہ (خدا کے) مقربوں میں سے ہے
۸۹  تو (اس کے لئے) آرام اور خوشبودار پھول اور نعمت کے باغ ہیں
۹۰  اور اگر وہ دائیں ہاتھ والوں میں سے ہے
۹۱  تو (کہا جائے گا کہ) تجھ پر داہنے ہاتھ والوں کی طرف سے سلام
۹۲  اور اگر وہ جھٹلانے والے گمراہوں میں سے ہے
۹۳  تو (اس کے لئے) کھولتے پانی کی ضیافت ہے
۹۴  اور جہنم میں داخل کیا جانا
۹۵  یہ (داخل کیا جانا یقیناً صحیح یعنی) حق الیقین ہے
۹۶  تو تم اپنے پروردگار بزرگ کے نام کی تسبیح کرتے رہو

 بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَٰنِ الرَّحِيمِ

١  إِذَا وَقَعَتِ الْوَاقِعَةُ
٢  لَيْسَ لِوَقْعَتِهَا كَاذِبَةٌ
٣  خَافِضَةٌ رَافِعَةٌ
٤  إِذَا رُجَّتِ الْأَرْضُ رَجًّا
٥  وَبُسَّتِ الْجِبَالُ بَسًّا
٦  فَكَانَتْ هَبَاءً مُنْبَثًّا
٧  وَكُنْتُمْ أَزْوَاجًا ثَلَاثَةً
٨  فَأَصْحَابُ الْمَيْمَنَةِ مَا أَصْحَابُ الْمَيْمَنَةِ
٩  وَأَصْحَابُ الْمَشْأَمَةِ مَا أَصْحَابُ الْمَشْأَمَةِ
١٠  وَالسَّابِقُونَ السَّابِقُونَ
١١  أُولَٰئِكَ الْمُقَرَّبُونَ
١٢  فِي جَنَّاتِ النَّعِيمِ
١٣  ثُلَّةٌ مِنَ الْأَوَّلِينَ
١٤  وَقَلِيلٌ مِنَ الْآخِرِينَ
١٥  عَلَىٰ سُرُرٍ مَوْضُونَةٍ
١٦  مُتَّكِئِينَ عَلَيْهَا مُتَقَابِلِينَ
١٧  يَطُوفُ عَلَيْهِمْ وِلْدَانٌ مُخَلَّدُونَ
١٨  بِأَكْوَابٍ وَأَبَارِيقَ وَكَأْسٍ مِنْ مَعِينٍ
١٩  لَا يُصَدَّعُونَ عَنْهَا وَلَا يُنْزِفُونَ
٢٠  وَفَاكِهَةٍ مِمَّا يَتَخَيَّرُونَ
٢١  وَلَحْمِ طَيْرٍ مِمَّا يَشْتَهُونَ
٢٢  وَحُورٌ عِينٌ
٢٣  كَأَمْثَالِ اللُّؤْلُؤِ الْمَكْنُونِ
٢٤  جَزَاءً بِمَا كَانُوا يَعْمَلُونَ
٢٥  لَا يَسْمَعُونَ فِيهَا لَغْوًا وَلَا تَأْثِيمًا
٢٦  إِلَّا قِيلًا سَلَامًا سَلَامًا
٢٧  وَأَصْحَابُ الْيَمِينِ مَا أَصْحَابُ الْيَمِينِ
٢٨  فِي سِدْرٍ مَخْضُودٍ
٢٩  وَطَلْحٍ مَنْضُودٍ
٣٠  وَظِلٍّ مَمْدُودٍ
٣١  وَمَاءٍ مَسْكُوبٍ
٣٢  وَفَاكِهَةٍ كَثِيرَةٍ
٣٣  لَا مَقْطُوعَةٍ وَلَا مَمْنُوعَةٍ
٣٤  وَفُرُشٍ مَرْفُوعَةٍ
٣٥  إِنَّا أَنْشَأْنَاهُنَّ إِنْشَاءً
٣٦  فَجَعَلْنَاهُنَّ أَبْكَارًا
٣٧  عُرُبًا أَتْرَابًا
٣٨  لِأَصْحَابِ الْيَمِينِ
٣٩  ثُلَّةٌ مِنَ الْأَوَّلِينَ
٤٠  وَثُلَّةٌ مِنَ الْآخِرِينَ
٤١  وَأَصْحَابُ الشِّمَالِ مَا أَصْحَابُ الشِّمَالِ
٤٢  فِي سَمُومٍ وَحَمِيمٍ
٤٣  وَظِلٍّ مِنْ يَحْمُومٍ
٤٤  لَا بَارِدٍ وَلَا كَرِيمٍ
٤٥  إِنَّهُمْ كَانُوا قَبْلَ ذَٰلِكَ مُتْرَفِينَ
٤٦  وَكَانُوا يُصِرُّونَ عَلَى الْحِنْثِ الْعَظِيمِ
٤٧  وَكَانُوا يَقُولُونَ أَئِذَا مِتْنَا وَكُنَّا تُرَابًا وَعِظَامًا أَإِنَّا لَمَبْعُوثُونَ
٤٨  أَوَآبَاؤُنَا الْأَوَّلُونَ
٤٩  قُلْ إِنَّ الْأَوَّلِينَ وَالْآخِرِينَ
٥٠  لَمَجْمُوعُونَ إِلَىٰ مِيقَاتِ يَوْمٍ مَعْلُومٍ
٥١  ثُمَّ إِنَّكُمْ أَيُّهَا الضَّالُّونَ الْمُكَذِّبُونَ
٥٢  لَآكِلُونَ مِنْ شَجَرٍ مِنْ زَقُّومٍ
٥٣  فَمَالِئُونَ مِنْهَا الْبُطُونَ
٥٤  فَشَارِبُونَ عَلَيْهِ مِنَ الْحَمِيمِ
٥٥  فَشَارِبُونَ شُرْبَ الْهِيمِ
٥٦  هَٰذَا نُزُلُهُمْ يَوْمَ الدِّينِ
٥٧  نَحْنُ خَلَقْنَاكُمْ فَلَوْلَا تُصَدِّقُونَ
٥٨  أَفَرَأَيْتُمْ مَا تُمْنُونَ
٥٩  أَأَنْتُمْ تَخْلُقُونَهُ أَمْ نَحْنُ الْخَالِقُونَ
٦٠  نَحْنُ قَدَّرْنَا بَيْنَكُمُ الْمَوْتَ وَمَا نَحْنُ بِمَسْبُوقِينَ
٦١  عَلَىٰ أَنْ نُبَدِّلَ أَمْثَالَكُمْ وَنُنْشِئَكُمْ فِي مَا لَا تَعْلَمُونَ
٦٢  وَلَقَدْ عَلِمْتُمُ النَّشْأَةَ الْأُولَىٰ فَلَوْلَا تَذَكَّرُونَ
٦٣  أَفَرَأَيْتُمْ مَا تَحْرُثُونَ
٦٤  أَأَنْتُمْ تَزْرَعُونَهُ أَمْ نَحْنُ الزَّارِعُونَ
٦٥  لَوْ نَشَاءُ لَجَعَلْنَاهُ حُطَامًا فَظَلْتُمْ تَفَكَّهُونَ
٦٦  إِنَّا لَمُغْرَمُونَ
٦٧  بَلْ نَحْنُ مَحْرُومُونَ
٦٨  أَفَرَأَيْتُمُ الْمَاءَ الَّذِي تَشْرَبُونَ
٦٩  أَأَنْتُمْ أَنْزَلْتُمُوهُ مِنَ الْمُزْنِ أَمْ نَحْنُ الْمُنْزِلُونَ
٧٠  لَوْ نَشَاءُ جَعَلْنَاهُ أُجَاجًا فَلَوْلَا تَشْكُرُونَ
٧١  أَفَرَأَيْتُمُ النَّارَ الَّتِي تُورُونَ
٧٢  أَأَنْتُمْ أَنْشَأْتُمْ شَجَرَتَهَا أَمْ نَحْنُ الْمُنْشِئُونَ
٧٣  نَحْنُ جَعَلْنَاهَا تَذْكِرَةً وَمَتَاعًا لِلْمُقْوِينَ
٧٤  فَسَبِّحْ بِاسْمِ رَبِّكَ الْعَظِيمِ
٧٥  فَلَا أُقْسِمُ بِمَوَاقِعِ النُّجُومِ
٧٦  وَإِنَّهُ لَقَسَمٌ لَوْ تَعْلَمُونَ عَظِيمٌ
٧٧  إِنَّهُ لَقُرْآنٌ كَرِيمٌ
٧٨  فِي كِتَابٍ مَكْنُونٍ
٧٩  لَا يَمَسُّهُ إِلَّا الْمُطَهَّرُونَ
٨٠  تَنْزِيلٌ مِنْ رَبِّ الْعَالَمِينَ
٨١  أَفَبِهَٰذَا الْحَدِيثِ أَنْتُمْ مُدْهِنُونَ
٨٢  وَتَجْعَلُونَ رِزْقَكُمْ أَنَّكُمْ تُكَذِّبُونَ
٨٣  فَلَوْلَا إِذَا بَلَغَتِ الْحُلْقُومَ
٨٤  وَأَنْتُمْ حِينَئِذٍ تَنْظُرُونَ
٨٥  وَنَحْنُ أَقْرَبُ إِلَيْهِ مِنْكُمْ وَلَٰكِنْ لَا تُبْصِرُونَ
٨٦  فَلَوْلَا إِنْ كُنْتُمْ غَيْرَ مَدِينِينَ
٨٧  تَرْجِعُونَهَا إِنْ كُنْتُمْ صَادِقِينَ
٨٨  فَأَمَّا إِنْ كَانَ مِنَ الْمُقَرَّبِينَ
٨٩  فَرَوْحٌ وَرَيْحَانٌ وَجَنَّتُ نَعِيمٍ
٩٠  وَأَمَّا إِنْ كَانَ مِنْ أَصْحَابِ الْيَمِينِ
٩١  فَسَلَامٌ لَكَ مِنْ أَصْحَابِ الْيَمِينِ
٩٢  وَأَمَّا إِنْ كَانَ مِنَ الْمُكَذِّبِينَ الضَّالِّينَ
٩٣  فَنُزُلٌ مِنْ حَمِيمٍ
٩٤  وَتَصْلِيَةُ جَحِيمٍ
٩٥  إِنَّ هَٰذَا لَهُوَ حَقُّ الْيَقِينِ
٩٦  فَسَبِّحْ بِاسْمِ رَبِّكَ الْعَظِيمِ

 In the name of Allah, the Entirely Merciful, the Especially Merciful.

1  When the Occurrence occurs,
2  There is, at its occurrence, no denial.
3  It will bring down [some] and raise up [others].
4  When the earth is shaken with convulsion
5  And the mountains are broken down, crumbling
6  And become dust dispersing.
7  And you become [of] three kinds:
8  Then the companions of the right – what are the companions of the right?
9  And the companions of the left – what are the companions of the left?
10  And the forerunners, the forerunners –
11  Those are the ones brought near [to Allah] 12  In the Gardens of Pleasure,
13  A [large] company of the former peoples
14  And a few of the later peoples,
15  On thrones woven [with ornament],
16  Reclining on them, facing each other.
17  There will circulate among them young boys made eternal
18  With vessels, pitchers and a cup [of wine] from a flowing spring –
19  No headache will they have therefrom, nor will they be intoxicated –
20  And fruit of what they select
21  And the meat of fowl, from whatever they desire.
22  And [for them are] fair women with large, [beautiful] eyes,
23  The likenesses of pearls well-protected,
24  As reward for what they used to do.
25  They will not hear therein ill speech or commission of sin –
26  Only a saying: “Peace, peace.”
27  The companions of the right – what are the companions of the right?
28  [They will be] among lote trees with thorns removed
29  And [banana] trees layered [with fruit] 30  And shade extended
31  And water poured out
32  And fruit, abundant [and varied],
33  Neither limited [to season] nor forbidden,
34  And [upon] beds raised high.
35  Indeed, We have produced the women of Paradise in a [new] creation
36  And made them virgins,
37  Devoted [to their husbands] and of equal age,
38  For the companions of the right [who are] 39  A company of the former peoples
40  And a company of the later peoples.
41  And the companions of the left – what are the companions of the left?
42  [They will be] in scorching fire and scalding water
43  And a shade of black smoke,
44  Neither cool nor beneficial.
45  Indeed they were, before that, indulging in affluence,
46  And they used to persist in the great violation,
47  And they used to say, “When we die and become dust and bones, are we indeed to be resurrected?
48  And our forefathers [as well]?”
49  Say, [O Muhammad], “Indeed, the former and the later peoples
50  Are to be gathered together for the appointment of a known Day.”
51  Then indeed you, O those astray [who are] deniers,
52  Will be eating from trees of zaqqum
53  And filling with it your bellies
54  And drinking on top of it from scalding water
55  And will drink as the drinking of thirsty camels.
56  That is their accommodation on the Day of Recompense.
57  We have created you, so why do you not believe?
58  Have you seen that which you emit?
59  Is it you who creates it, or are We the Creator?
60  We have decreed death among you, and We are not to be outdone
61  In that We will change your likenesses and produce you in that [form] which you do not know.
62  And you have already known the first creation, so will you not remember?
63  And have you seen that [seed] which you sow?
64  Is it you who makes it grow, or are We the grower?
65  If We willed, We could make it [dry] debris, and you would remain in wonder,
66  [Saying], “Indeed, we are [now] in debt;
67  Rather, we have been deprived.”
68  And have you seen the water that you drink?
69  Is it you who brought it down from the clouds, or is it We who bring it down?
70  If We willed, We could make it bitter, so why are you not grateful?
71  And have you seen the fire that you ignite?
72  Is it you who produced its tree, or are We the producer?
73  We have made it a reminder and provision for the travelers,
74  So exalt the name of your Lord, the Most Great.
75  Then I swear by the setting of the stars,
76  And indeed, it is an oath – if you could know – [most] great.
77  Indeed, it is a noble Qur’an
78  In a Register well-protected;
79  None touch it except the purified.
80  [It is] a revelation from the Lord of the worlds.
81  Then is it to this statement that you are indifferent
82  And make [the thanks for] your provision that you deny [the Provider]?
83  Then why, when the soul at death reaches the throat
84  And you are at that time looking on –
85  And Our angels are nearer to him than you, but you do not see –
86  Then why do you not, if you are not to be recompensed,
87  Bring it back, if you should be truthful?
88  And if the deceased was of those brought near to Allah,
89  Then [for him is] rest and bounty and a garden of pleasure.
90  And if he was of the companions of the right,
91  Then [the angels will say], “Peace for you; [you are] from the companions of the right.”
92  But if he was of the deniers [who were] astray,
93  Then [for him is] accommodation of scalding water
94  And burning in Hellfire
95  Indeed, this is the true certainty,
96  So exalt the name of your Lord, the Most Great.

 奉至仁至慈的真主之名

1  当那件大事发生的时候,
2  没有任何人否认其发生。
3  那件大事将是能使人降级,能使人升级的;
4  当大地震荡,
5  山峦粉碎,
6  化为散漫的尘埃,
7  而你们分为三等的时候。
8  幸福者,幸福者是何等的人?
9  薄命者,薄命者是何等的人?
10  最先行善者,是最先入乐园的人,
11  这等人,确是蒙主眷顾的。
12  他们将在恩泽的乐园中。
13  许多前人
14  和少数后人,
15  在珠宝镶成的床榻上,
16  彼此相对地靠在上面。
17  长生不老的僮仆,轮流着服待他们,
18  捧着盏和壶,与满杯的醴泉;
19  他们不因那醴泉而头痛,也不酩酊。
20  他们有自己所选择的水果,
21  和自己所爱好的鸟肉。
22  还有白皙的、美目的妻子,
23  好象藏在蚌壳里的珍珠一样。
24  那是为了报酬他们的善行。
25  他们在乐园里,听不到恶言和谎话,
26  但听到说:祝你们平安!祝你们平安!
27  幸福者,幸福者是何等的人?
28  他们享受无刺的酸枣树,
29  结实累累的(香蕉)树;
30  漫漫的树荫;
31  泛泛的流水;
32  丰富的水果,
33  四时不绝,可以随意摘食;
34  与被升起的床榻。
35  我使她们重新生长,
36  我使她们常为处女,
37  依恋丈夫,彼此同岁;
38  这些都是幸福者所享受的。
39  他们是许多前人
40  和许多后人。
41  薄命者,薄命者是何等的人?
42  他们在毒风和沸水中,
43  在黑烟的阴影下,
44  既不凉爽,又不美观。
45  以前他们确是豪华的,
46  确是固执大罪的,
47  他们常说:难道我们死后,已变成尘土和枯骨的时候,我们必定要复活吗?
48  连我们的祖先也要复活吗?
49  你说:前人和后人,
50  在一个著名的日期和特定时间必定要被集合。
51  然后迷误的、否认复活的人们啊!
52  你们必定食攒(木+苦)木的果实,
53  而以它充饥,
54  然后痛饮沸水,
55  象害消渴病的骆驼饮凉水一样。
56  这是他们在报应之日所受的款待。
57  我曾创造你们,你们怎么不信复活呢?
58  你们告诉我吧!你们所射的精液,
59  究竟是你们把它造成人呢?还是我把它造成人呢?
60  我曾将死亡分配给你们,任何人不能阻挠我,
61  不让我改变你们的品性,而使你们生长在你们所不知的状态中。
62  你们确已知道初次的生长,你们怎不觉悟呢?
63  你们告诉我吧!你们所耕种的庄稼,
64  究竟是你们使它发荣呢?还是我使它发荣呢?
65  假若我意欲,我必使它凋零,而你们变成诧异者,
66  你们将说:我们是遭损失的。
67  不然!我们是被剥夺的。
68  你们告诉吧!你们所饮的水,
69  究竟是你们使它从云中降下的呢?还是我使它降下的呢?
70  假若我意欲,我必使它变成苦的,你们怎么不感谢呢?
71  你们告诉吧!你们所钻取的火;
72  究竟是你们使燧木生长的呢?还是我使它生长的呢?
73  我以它为教训,并且以它为荒野的居民的慰藉,
74  故你们应当颂扬你的主的大名。
75  我必以星宿的没落处盟誓,
76  这确是一个重大的盟誓,假若你们知道。
77  这确是宝贵的《古兰经》,
78  记录在珍藏的经本中,
79  只有纯洁者才得抚摸那经本。
80  《古兰经》是从全世界的主降示的。
81  难道你们藐视这训辞,
82  而以否认代替感谢吗?
83  (你们)怎么不在灵魂到将死者的咽喉的时候–
84  那时候,你们大家看着他,
85  我比你们更临近他,但你们不晓得,
86  如果你们不是受报应的,–
87  你们怎不使灵魂复返于本位呢?如果你们是说实话的。
88  如果他是被眷顾的,
89  那末,他将享受舒适、给养与恩泽的乐园;
90  如果他是幸福者,
91  那末,一般幸福的人将对他说:祝你平安!
92  如果他是迷误的、否认复活者,
93  那末,他将享受沸水的款待,
94  和烈火的烧灼。
95  这确是无可置疑的真理。
96  故你应当颂扬你的主的大名。

 ¡En el nombre de Alá, el Compasivo, el Misericordioso!

1  Cuando suceda el Acontecimiento,
2  nadie podrá negarlo.
3  ¡Abatirá, exaltará!
4  Cuando la tierra sufra una violenta sacudida
5  y las montañas sean totalmente desmenuzadas,
6  convirtiéndose en fino polvo disperso,
7  y seáis divididos en tres grupos…
8  Los de la derecha -¿qué son los de la derecha?-
9  los de la izquierda -¿qué son los de la izquierda?-
10  y los más distinguidos, que son los más distinguidos.
11  Éstos son los allegados,
12  en los jardines de la Delicia.
13  Habrá muchos de los primeros
14  y pocos de los últimos.
15  En lechos entretejidos de oro y piedras preciosas,
16  reclinados en ellos, unos enfrente de otros.
17  Circularán entre ellos jóvenes criados de eterna juventud
18  con cálices. jarros y una copa de agua viva,
19  que no les dará dolor de cabeza ni embriagará,
20  con fruta que ellos escogerán,
21  con la carne de ave que les apetezca.
22  Habrá huríes de grandes ojos,
23  semejantes a perlas ocultas,
24  como retribución a sus obras.
25  No oirán allí vaniloquio ni incitación al pecado,
26  sino una palabra: «¡Paz! ¡Paz!»
27  Los de la derecha -¿qué son los de la derecha-
28  estarán entre azufaifos sin espinas
29  y liños de acacias,
30  en una extensa sombra,
31  cerca de agua corriente
32  y abundante fruta,
33  inagotable y permitida,
34  en lechos elevados.
35  Nosotros las hemos formado de manera especial
36  y hecho vírgenes,
37  afectuosas, de una misma edad,
38  para los de la derecha.
39  Habrá muchos de los primeros
40  y muchos de los últimos.
41  Los de la izquierda -¿qué son los de la izquierda?-
42  estarán expuestos a un viento abrasador, en agua muy caliente,
43  a la sombra de un humo negro,
44  ni fresca ni agradable.
45  Antes, estuvieron rodeados de lujo,
46  sin salir del enorme pecado.
47  Decían: «Cuando muramos y seamos tierra y huesos, ¿se nos resucitará acaso?
48  ¿Y también a nuestros antepasados?»
49  Di: «¡En verdad, los primeros y los últimos
50  serán reunidos en el momento fijado de un día determinado!»
51  Luego, vosotros, extraviados, desmentidores,
52  comeréis, sí, de un árbol, del Zaqqum,
53  de cuyos frutos llenaréis el vientre.
54  Y, además, beberéis agua muy caliente,
55  sedientos como camellos que mueren de sed…,
56  Ese será su alojamiento el día del Juicio.
57  Nosotros os creamos. ¿Por qué, pues, no aceptáis?
58  Y ¿qué os parece el semen que eyaculáis?
59  ¿Lo creáis vosotros o somos Nosotros los creadores?
60  Nosotros hemos determinado que muráis y nadie podrá escapársenos,
61  para que otros seres semejantes os sucedan y haceros renacer a un estado que no conocéis.
62  Ya habéis conocido una primera creación. ¿Por qué, pues, no os dejáis amonestar?
63  Y ¿qué os parece vuestra siembra?
64  ¿La sembráis vosotros o somos Nosotros los sembradores?
65  Si quisiéramos, de vuestro campo haríamos paja seca e iríais lamentándoos:
66  «Estamos abrumados de deudas.
67  más aún, se nos ha despojado».
68  Y ¿qué os parece el agua que bebéis?
69  ¿La hacéis bajar de las nubes vosotros o somos Nosotros Quienes la hacen bajar?
70  Si hubiéramos querido, la habríamos hecho salobre. ¿Por qué, pues, no dais las gracias?
71  Y ¿qué os parece el fuego que encendéis?
72  ¿Habéis hecho crecer vosotros el árbol que lo alimenta o somos Nosotros Quienes lo han hecho crecer?
73  Nosotros hemos hecho eso como recuerdo y utilidad para los habitantes del desierto.
74  ¡Glorifica, pues, el nombre de tu Señor, el Grandioso!
75  ¡Pues no! ¡Juro por el ocaso de las estrellas!
76  (Juramento en verdad-si supierais…-solemne).
77  ¡Es, en verdad, un Corán noble,
78  contenido en una Escritura escondida
79  que sólo los purificados tocan,
80  una revelación que procede del Señor del universo!
81  ¡Tenéis en poco este discurso
82  y hacéis de vuestra desmentida vuestro sustento?
83  ¿Por qué, pues, cuando se sube a la garganta,
84  viéndolo vosotros,
85  -y Nosotros estamos más cerca que vosotros de él, pero no percibís-,
86  por qué, pues, si no vais a ser juzgados
87  y es verdad lo que decís, no la hacéis volver?
88  Si figura entre los allegados,
89  tendrá reposo, plantas aromáticas y jardín de delicia.
90  Si es de los de la derecha:
91  «¡Paz a ti, que eres de los de la derecha!»
92  Pero, si es de los extraviados desmentidores,
93  será alojado en agua muy caliente
94  y arderá en fuego de gehena.
95  ¡Esto es algo, sí, absolutamente cierto!
96  ¡Glorifica, pues, el nombre de tu Señor, el Grandioso!