Project Description

AL MAARIJ

 شروع الله کا نام لے کر جو بڑا مہربان نہایت رحم والا ہے

۱  ایک طلب کرنے والے نے عذاب طلب کیا جو نازل ہو کر رہے گا
۲  (یعنی) کافروں پر (اور) کوئی اس کو ٹال نہ سکے گا
۳  (اور وہ) خدائے صاحب درجات کی طرف سے (نازل ہوگا)
۴  جس کی طرف روح (الامین) اور فرشتے پڑھتے ہیں (اور) اس روز (نازل ہوگا) جس کا اندازہ پچاس ہزار برس کا ہوگا
۵  (تو تم کافروں کی باتوں کو) قوت کے ساتھ برداشت کرتے رہو
۶  وہ ان لوگوں کی نگاہ میں دور ہے
۷  اور ہماری نظر میں نزدیک
۸  جس دن آسمان ایسا ہو جائے گا جیسے پگھلا ہوا تانبا
۹  اور پہاڑ (ایسے) جیسے (دھنکی ہوئی) رنگین اون
۱۰  اور کوئی دوست کسی دوست کا پرسان نہ ہوگا
۱۱  ایک دوسرے کو سامنے دیکھ رہے ہوں گے (اس روز) گنہگار خواہش کرے گا کہ کسی طرح اس دن کے عذاب کے بدلے میں (سب کچھ) دے دے یعنی اپنے بیٹے
۱۲  اور اپنی بیوی اور اپنے بھائی
۱۳  اور اپنا خاندان جس میں وہ رہتا تھا
۱۴  اور جتنے آدمی زمین میں ہیں (غرض) سب (کچھ دے دے) اور اپنے تئیں عذاب سے چھڑا لے
۱۵  (لیکن) ایسا ہرگز نہیں ہوگا وہ بھڑکتی ہوئی آگ ہے
۱۶  کھال ادھیڑ ڈالنے والی
۱۷  ان لوگوں کو اپنی طرف بلائے گی جنہوں نے (دین حق سے) اعراض کیا
۱۸  اور (مال) جمع کیا اور بند کر رکھا
۱۹  کچھ شک نہیں کہ انسان کم حوصلہ پیدا ہوا ہے
۲۰  جب اسے تکلیف پہنچتی ہے تو گھبرا اٹھتا ہے
۲۱  اور جب آسائش حاصل ہوتی ہے تو بخیل بن جاتا ہے
۲۲  مگر نماز گزار
۲۳  جو نماز کا التزام رکھتے (اور بلاناغہ پڑھتے) ہیں
۲۴  اور جن کے مال میں حصہ مقرر ہے
۲۵  (یعنی) مانگنے والے کا۔ اور نہ مانگے والے والا کا
۲۶  اور جو روز جزا کو سچ سمجھتے ہیں
۲۷  اور جو اپنے پروردگار کے عذاب سے خوف رکھتے ہیں
۲۸  بےشک ان کے پروردگار کا عذاب ہے ہی ایسا کہ اس سے بےخوف نہ ہوا جائے
۲۹  اور جو اپنی شرمگاہوں کی حفاظت کرتے ہیں
۳۰  مگر اپنی بیویوں یا لونڈیوں سے کہ (ان کے پاس جانے پر) انہیں کچھ ملامت نہیں
۳۱  اور جو لوگ ان کے سوا اور کے خواستگار ہوں وہ حد سے نکل جانے والے ہیں
۳۲  اور جو اپنی امانتوں اور اقراروں کا پاس کرتے ہیں
۳۳  اور جو اپنی شہادتوں پر قائم رہتے ہیں
۳۴  اور جو اپنی نماز کی خبر رکھتے ہیں
۳۵  یہی لوگ باغہائے بہشت میں عزت واکرام سے ہوں گے
۳۶  تو ان کافروں کو کیا ہوا ہے کہ تمہاری طرف دوڑے چلے آتے ہیں
۳۷  اور) دائیں بائیں سے گروہ گروہ ہو کر (جمع ہوتے جاتے ہیں)
۳۸  کیا ان میں سے ہر شخص یہ توقع رکھتا ہے کہ نعمت کے باغ میں داخل کیا جائے گا
۳۹  ہرگز نہیں۔ ہم نے ان کو اس چیز سے پیدا کیا ہے جسے وہ جانتے ہیں
۴۰  ہمیں مشرقوں اور مغربوں کے مالک کی قسم کہ ہم طاقت رکھتے ہیں
۴۱  (یعنی) اس بات پر (قادر ہیں) کہ ان سے بہتر لوگ بدل لائیں اور ہم عاجز نہیں ہیں
۴۲  تو (اے پیغمبر) ان کو باطل میں پڑے رہنے اور کھیل لینے دو یہاں تک کہ جس دن کا ان سے وعدہ کیا جاتا ہے وہ ان کے سامنے آ موجود ہو
۴۳  اس دن یہ قبر سے نکل کر (اس طرح) دوڑیں گے جیسے (شکاری) شکار کے جال کی طرف دوڑتے ہیں
۴۴  ان کی آنکھیں جھک رہی ہوں گی اور ذلت ان پر چھا رہی ہوگی۔ یہی وہ دن ہے جس کا ان سے وعدہ کیا جاتا تھا

 بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَٰنِ الرَّحِيمِ

١  سَأَلَ سَائِلٌ بِعَذَابٍ وَاقِعٍ
٢  لِلْكَافِرِينَ لَيْسَ لَهُ دَافِعٌ
٣  مِنَ اللَّهِ ذِي الْمَعَارِجِ
٤  تَعْرُجُ الْمَلَائِكَةُ وَالرُّوحُ إِلَيْهِ فِي يَوْمٍ كَانَ مِقْدَارُهُ خَمْسِينَ أَلْفَ سَنَةٍ
٥  فَاصْبِرْ صَبْرًا جَمِيلًا
٦  إِنَّهُمْ يَرَوْنَهُ بَعِيدًا
٧  وَنَرَاهُ قَرِيبًا
٨  يَوْمَ تَكُونُ السَّمَاءُ كَالْمُهْلِ
٩  وَتَكُونُ الْجِبَالُ كَالْعِهْنِ
١٠  وَلَا يَسْأَلُ حَمِيمٌ حَمِيمًا
١١  يُبَصَّرُونَهُمْ ۚ يَوَدُّ الْمُجْرِمُ لَوْ يَفْتَدِي مِنْ عَذَابِ يَوْمِئِذٍ بِبَنِيهِ
١٢  وَصَاحِبَتِهِ وَأَخِيهِ
١٣  وَفَصِيلَتِهِ الَّتِي تُؤْوِيهِ
١٤  وَمَنْ فِي الْأَرْضِ جَمِيعًا ثُمَّ يُنْجِيهِ
١٥  كَلَّا ۖ إِنَّهَا لَظَىٰ
١٦  نَزَّاعَةً لِلشَّوَىٰ
١٧  تَدْعُو مَنْ أَدْبَرَ وَتَوَلَّىٰ
١٨  وَجَمَعَ فَأَوْعَىٰ
١٩  إِنَّ الْإِنْسَانَ خُلِقَ هَلُوعًا
٢٠  إِذَا مَسَّهُ الشَّرُّ جَزُوعًا
٢١  وَإِذَا مَسَّهُ الْخَيْرُ مَنُوعًا
٢٢  إِلَّا الْمُصَلِّينَ
٢٣  الَّذِينَ هُمْ عَلَىٰ صَلَاتِهِمْ دَائِمُونَ
٢٤  وَالَّذِينَ فِي أَمْوَالِهِمْ حَقٌّ مَعْلُومٌ
٢٥  لِلسَّائِلِ وَالْمَحْرُومِ
٢٦  وَالَّذِينَ يُصَدِّقُونَ بِيَوْمِ الدِّينِ
٢٧  وَالَّذِينَ هُمْ مِنْ عَذَابِ رَبِّهِمْ مُشْفِقُونَ
٢٨  إِنَّ عَذَابَ رَبِّهِمْ غَيْرُ مَأْمُونٍ
٢٩  وَالَّذِينَ هُمْ لِفُرُوجِهِمْ حَافِظُونَ
٣٠  إِلَّا عَلَىٰ أَزْوَاجِهِمْ أَوْ مَا مَلَكَتْ أَيْمَانُهُمْ فَإِنَّهُمْ غَيْرُ مَلُومِينَ
٣١  فَمَنِ ابْتَغَىٰ وَرَاءَ ذَٰلِكَ فَأُولَٰئِكَ هُمُ الْعَادُونَ
٣٢  وَالَّذِينَ هُمْ لِأَمَانَاتِهِمْ وَعَهْدِهِمْ رَاعُونَ
٣٣  وَالَّذِينَ هُمْ بِشَهَادَاتِهِمْ قَائِمُونَ
٣٤  وَالَّذِينَ هُمْ عَلَىٰ صَلَاتِهِمْ يُحَافِظُونَ
٣٥  أُولَٰئِكَ فِي جَنَّاتٍ مُكْرَمُونَ
٣٦  فَمَالِ الَّذِينَ كَفَرُوا قِبَلَكَ مُهْطِعِينَ
٣٧  عَنِ الْيَمِينِ وَعَنِ الشِّمَالِ عِزِينَ
٣٨  أَيَطْمَعُ كُلُّ امْرِئٍ مِنْهُمْ أَنْ يُدْخَلَ جَنَّةَ نَعِيمٍ
٣٩  كَلَّا ۖ إِنَّا خَلَقْنَاهُمْ مِمَّا يَعْلَمُونَ
٤٠  فَلَا أُقْسِمُ بِرَبِّ الْمَشَارِقِ وَالْمَغَارِبِ إِنَّا لَقَادِرُونَ
٤١  عَلَىٰ أَنْ نُبَدِّلَ خَيْرًا مِنْهُمْ وَمَا نَحْنُ بِمَسْبُوقِينَ
٤٢  فَذَرْهُمْ يَخُوضُوا وَيَلْعَبُوا حَتَّىٰ يُلَاقُوا يَوْمَهُمُ الَّذِي يُوعَدُونَ
٤٣  يَوْمَ يَخْرُجُونَ مِنَ الْأَجْدَاثِ سِرَاعًا كَأَنَّهُمْ إِلَىٰ نُصُبٍ يُوفِضُونَ
٤٤  خَاشِعَةً أَبْصَارُهُمْ تَرْهَقُهُمْ ذِلَّةٌ ۚ ذَٰلِكَ الْيَوْمُ الَّذِي كَانُوا يُوعَدُونَ

 In the name of Allah, the Entirely Merciful, the Especially Merciful.

1  A supplicant asked for a punishment bound to happen
2  To the disbelievers; of it there is no preventer.
3  [It is] from Allah, owner of the ways of ascent.
4  The angels and the Spirit will ascend to Him during a Day the extent of which is fifty thousand years.
5  So be patient with gracious patience.
6  Indeed, they see it [as] distant,
7  But We see it [as] near.
8  On the Day the sky will be like murky oil,
9  And the mountains will be like wool,
10  And no friend will ask [anything of] a friend,
11  They will be shown each other. The criminal will wish that he could be ransomed from the punishment of that Day by his children
12  And his wife and his brother
13  And his nearest kindred who shelter him
14  And whoever is on earth entirely [so] then it could save him.
15  No! Indeed, it is the Flame [of Hell],
16  A remover of exteriors.
17  It invites he who turned his back [on truth] and went away [from obedience] 18  And collected [wealth] and hoarded.
19  Indeed, mankind was created anxious:
20  When evil touches him, impatient,
21  And when good touches him, withholding [of it],
22  Except the observers of prayer –
23  Those who are constant in their prayer
24  And those within whose wealth is a known right
25  For the petitioner and the deprived –
26  And those who believe in the Day of Recompense
27  And those who are fearful of the punishment of their Lord –
28  Indeed, the punishment of their Lord is not that from which one is safe –
29  And those who guard their private parts
30  Except from their wives or those their right hands possess, for indeed, they are not to be blamed –
31  But whoever seeks beyond that, then they are the transgressors –
32  And those who are to their trusts and promises attentive
33  And those who are in their testimonies upright
34  And those who [carefully] maintain their prayer:
35  They will be in gardens, honored.
36  So what is [the matter] with those who disbelieve, hastening [from] before you, [O Muhammad],
37  [To sit] on [your] right and [your] left in separate groups?
38  Does every person among them aspire to enter a garden of pleasure?
39  No! Indeed, We have created them from that which they know.
40  So I swear by the Lord of [all] risings and settings that indeed We are able
41  To replace them with better than them; and We are not to be outdone.
42  So leave them to converse vainly and amuse themselves until they meet their Day which they are promised –
43  The Day they will emerge from the graves rapidly as if they were, toward an erected idol, hastening.
44  Their eyes humbled, humiliation will cover them. That is the Day which they had been promised.

 奉至仁至慈的真主之名

1  有人曾请求一种将发生的刑罚。
2  那是为不信的人们而预定的,没有任何人能加以抵抗。
3  那是真主–天梯的主宰–发出的,
4  众天神和精神在一日之内升到他那里。那一日的长度是五万年。
5  你安然地忍受吧。
6  他们以为那刑罚是很远的,
7  我却以为那是很近的。
8  在那日天像熔铜,
9  山像彩绒。
10  亲戚相见不相问。
11  罪人愿意赎取那日的刑罚,即使牺牲他的儿女、
12  他的妻子、他的弟兄,
13  和那收容他的血族,
14  以及大地上所有的人,但愿那能拯救自己。
15  绝不然,那确是发焰的烈火,
16  能揭去头皮,
17  能召唤转身而逃避的人。
18  他曾聚积财产而加以保藏,
19  人确是被造成浮躁的,
20  遭遇灾殃的时候是烦恼的,
21  获得财富的时候是吝啬的。
22  只有礼拜的人们,不是那样,
23  他们是常守拜功的;
24  他们的财产中有一个定份,
25  是用於施济乞丐和贫民的;
26  他们是承认报应之日的;
27  他们是畏惧他们的主的刑罚的。
28  他们的主的刑罚,确是难保不降临的。
29  他们是保守贞操的,
30  除非对自己的妻子和奴婢,他们确是不因此而受责备的;
31  凡在这个范围之外有所要求的人,都是过份的。
32  他们是尊重自己所受的信托,和自己所缔的盟约的;
33  他们是秉公作证的;
34  他们是谨守拜功的。
35  这等人,是在乐园中受优待的。
36  不信道的人们,怎么注视著你,三五成群的分列
37  在你的左右呢?
38  难道他们每个人都希望入恩泽的乐园吗?
39  绝不然!我确已用他们所知道的物质创造了他们。
40  不然,我以一切东方和西方的主盟誓,我确是全能的,
41  我能以比他们更好的人代替他们,我不是无能的。
42  你应当任他们妄谈,任他们游戏,直到他们看到他们所被警告的日子。
43  在那日,他们将从坟中出来奔走,他们好像奔到牌位一样,
44  同时,他们身遭凌辱,不敢仰视。那是他们被警告的日子。

 ¡En el nombre de Alá, el Compasivo, el Misericordioso!

1  Alguien ha pedido un castigo inmediato
2  para los infieles, que nadie pueda rechazar,
3  que venga de Alá, Señor de las gradas.
4  Los ángeles y el Espíritu ascienden a Él en un día que equivale a cincuenta mil años.
5  ¡Ten, pues, digna paciencia!
6  Piensan que está lejos,
7  pero Nosotros pensamos que está cerca.
8  El día que el cielo parezca metal fundido,
9  y las montañas, copos de lana,
10  y nadie pregunte por su amigo ferviente.
11  Les será dado verles. El pecador querrá librarse del castigo de ese día ofreciendo como rescate a sus hijos varones,
12  a su compañera, a su hermano,
13  Al clan que lo cobijó,
14  a todos los de la tierra. Eso le salvaría.
15  ¡No! Será una hoguera,
16  que arrancará el cuero cabelludo
17  y reclamará a quien retroceda y vuelva la espalda,
18  a quien amase y atesore.
19  El hombre es de natural impaciente.
20  Pusilánime cuando sufre un mal,
21  mezquino cuando la fortuna le favorece.
22  Se exceptúa a quienes oran
23  perseverando en su azalá,
24  parte de cuyos bienes es de derecho
25  para el mendigo y el indigente,
26  que tienen por auténtico el día del Juicio,
27  que temen el castigo de su Señor
28  -nadie debe sentirse seguro contra el castigo de su Señor-,
29  que se abstienen de comercio carnal,
30  salvo con sus esposas o con sus esclavas -en cuyo caso no incurren en reproche,
31  mientras que quienes desean a otras mujeres, ésos son los que violan la ley-,
32  que respetan los depósitos que se les confían y las promesas que hacen,
33  que dicen la verdad en sus testimonios,
34  que observan su azalá.
35  Esos tales estarán en jardines, honrados.
36  ¿Qué les pasa a los infieles, que vienen hacia ti corriendo con el cuello extendido,
37  en grupos, por la derecha y por la izquierda?
38  ¿Es que cada uno de ellos anhela ser introducido en un jardín de delicia?
39  ¡No! Les creamos de lo que saben.
40  ¡Pues no! ¡Juro por el Señor de los Orientes y de los Occidentes, que somos bien capaces
41  de sustituirles por otros mejores que ellos, sin que nadie pueda impedírnoslo!
42  ¡Déjales que parloteen y jueguen hasta que les llegue el día con que se les ha amenazado,
43  el día que salgan de las sepulturas, rápidos como si corrieran hacia piedras erectas,
44  la mirada abatida, cubiertos de humillación! Tal será el día con que se les había amenazado.