Project Description

AT TUR

 شروع الله کا نام لے کر جو بڑا مہربان نہایت رحم والا ہے

۱  (کوہ) طور کی قسم
۲  اور کتاب کی جو لکھی ہوئی ہے
۳  کشادہ اوراق میں
۴  اور آباد گھر کی
۵  اور اونچی چھت کی
۶  اور ابلتے ہوئے دریا کی
۷  کہ تمہارے پروردگار کا عذاب واقع ہو کر رہے گا
۸  (اور) اس کو کوئی روک نہیں سکے گا
۹  جس دن آسمان لرزنے لگا کپکپا کر
۱۰  اور پہاڑ اُڑنے لگے اون ہو کر
۱۱  اس دن جھٹلانے والوں کے لئے خرابی ہے
۱۲  جو خوض (باطل) میں پڑے کھیل رہے ہیں
۱۳  جس دن ان کو آتش جہنم کی طرف دھکیل دھکیل کر لے جائیں گے
۱۴  یہی وہ جہنم ہے جس کو تم جھوٹ سمجھتے تھے
۱۵  تو کیا یہ جادو ہے یا تم کو نظر ہی نہیں آتا
۱۶  اس میں داخل ہوجاؤ اور صبر کرو یا نہ کرو تمہارے لئے یکساں ہے۔ جو کام تم کیا کرتے تھے (یہ) انہی کا تم کو بدلہ مل رہا ہے
۱۷  جو پرہیزگار ہیں وہ باغوں اور نعتموں میں ہوں گے
۱۸  جو کچھ ان کے پروردگار نے ان کو بخشا اس (کی وجہ) سے خوشحال۔ اور ان کے پروردگار نے ان کو دوزخ کے عذاب سے بچا لیا
۱۹  اپنے اعمال کے صلے میں مزے سے کھاؤ اور پیو
۲۰  تختوں پر جو برابر برابر بچھے ہوئے ہیں تکیہ لگائے ہوئے اور بڑی بڑی آنکھوں والی حوروں سے ہم ان کا عقد کر دیں گے
۲۱  اور جو لوگ ایمان لائے اور ان کی اولاد بھی (راہ) ایمان میں ان کے پیچھے چلی۔ ہم ان کی اولاد کو بھی ان (کے درجے) تک پہنچا دیں گے اور ان کے اعمال میں سے کچھ کم نہ کریں گے۔ ہر شخص اپنے اعمال میں پھنسا ہوا ہے
۲۲  اور جس طرح کے میوے اور گوشت کو ان کا جی چاہے گا ہم ان کو عطا کریں گے
۲۳  وہاں وہ ایک دوسرے سے جام شراب جھپٹ لیا کریں گے جس (کے پینے) سے نہ ہذیان سرائی ہوگی نہ کوئی گناہ کی بات
۲۴  اور نوجوان خدمت گار (جو ایسے ہوں گے) جیسے چھپائے ہوئے موتی ان کے آس پاس پھریں گے
۲۵  اور ایک دوسرے کی طرف رخ کرکے آپس میں گفتگو کریں گے
۲۶  کہیں گے کہ اس سے پہلے ہم اپنے گھر میں (خدا سے) ڈرتے رہتے تھے
۲۷  تو خدا نے ہم پر احسان فرمایا اور ہمیں لو کے عذاب سے بچا لیا
۲۸  اس سے پہلے ہم اس سے دعائیں کیا کرتے تھے۔ بےشک وہ احسان کرنے والا مہربان ہے
۲۹  تو (اے پیغمبر) تم نصیحت کرتے رہو تم اپنے پروردگار کے فضل سے نہ تو کاہن ہو اور نہ دیوانے
۳۰  کیا کافر کہتے ہیں کہ یہ شاعر ہے (اور) ہم اس کے حق میں زمانے کے حوادث کا انتظار کر رہے ہیں
۳۱  کہہ دو کہ انتظار کئے جاؤ میں بھی تمہارے ساتھ انتظار کرتا ہوں
۳۲  کیا ان کی عقلیں ان کو یہی سکھاتی ہیں۔ بلکہ یہ لوگ ہیں ہی شریر
۳۳  کیا (کفار) کہتے ہیں کہ ان پیغمبر نے قرآن از خود بنا لیا ہے بات یہ ہے کہ یہ (خدا پر) ایمان نہیں رکھتے
۳۴  اگر یہ سچے ہیں تو ایسا کلام بنا تو لائیں
۳۵  کیا یہ کسی کے پیدا کئے بغیر ہی پیدا ہوگئے ہیں۔ یا یہ خود (اپنے تئیں) پیدا کرنے والے ہیں
۳۶  یا انہوں نے آسمانوں اور زمین کو پیدا کیا ہے؟ (نہیں) بلکہ یہ یقین ہی نہیں رکھتے
۳۷  کیا ان کے پاس تمہارے پروردگار کے خزانے ہیں۔ یا یہ (کہیں کے) داروغہ ہیں؟
۳۸  یا ان کے پاس کوئی سیڑھی ہے جس پر (چڑھ کر آسمان سے باتیں) سن آتے ہیں۔ تو جو سن آتا ہے وہ صریح سند دکھائے
۳۹  کیا خدا کی تو بیٹیاں اور تمہارے بیٹے
۴۰  (اے پیغمبر) کیا تم ان سے صلہ مانگتے ہو کہ ان پر تاوان کا بوجھ پڑ رہا ہے
۴۱  یا ان کے پاس غیب (کا علم) ہے کہ وہ اسے لکھ لیتے ہیں
۴۲  کیا یہ کوئی داؤں کرنا چاہتے ہیں تو کافر تو خود داؤں میں آنے والے ہیں
۴۳  کیا خدا کے سوا ان کا کوئی اور معبود ہے؟ خدا ان کے شریک بنانے سے پاک ہے
۴۴  اور اگر یہ آسمان سے (عذاب) کا کوئی ٹکڑا گرتا ہوا دیکھیں تو کہیں کہ یہ گاڑھا بادل ہے
۴۵  پس ان کو چھوڑ دو یہاں تک کہ وہ روز جس میں وہ بےہوش کردیئے جائیں گے، سامنے آجائے
۴۶  جس دن ان کا کوئی داؤں کچھ بھی کام نہ آئے اور نہ ان کو (کہیں سے) مدد ہی ملے
۴۷  اور ظالموں کے لئے اس کے سوا اور عذاب بھی ہے لیکن ان میں کے اکثر نہیں جانتے
۴۸  اور تم اپنے پروردگار کے حکم کے انتظار میں صبر کئے رہو۔ تم تو ہماری آنکھوں کے سامنے ہو اور جب اُٹھا کرو تو اپنے پروردگار کی تعریف کے ساتھ تسبیح کیا کرو
۴۹  اور رات کے بعض اوقات میں بھی اور ستاروں کے غروب ہونے کے بعد بھی اس کی تنزیہ کیا کرو

بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَٰنِ الرَّحِيمِ

١  وَالطُّورِ
٢  وَكِتَابٍ مَسْطُورٍ
٣  فِي رَقٍّ مَنْشُورٍ
٤  وَالْبَيْتِ الْمَعْمُورِ
٥  وَالسَّقْفِ الْمَرْفُوعِ
٦  وَالْبَحْرِ الْمَسْجُورِ
٧  إِنَّ عَذَابَ رَبِّكَ لَوَاقِعٌ
٨  مَا لَهُ مِنْ دَافِعٍ
٩  يَوْمَ تَمُورُ السَّمَاءُ مَوْرًا
١٠  وَتَسِيرُ الْجِبَالُ سَيْرًا
١١  فَوَيْلٌ يَوْمَئِذٍ لِلْمُكَذِّبِينَ
١٢  الَّذِينَ هُمْ فِي خَوْضٍ يَلْعَبُونَ
١٣  يَوْمَ يُدَعُّونَ إِلَىٰ نَارِ جَهَنَّمَ دَعًّا
١٤  هَٰذِهِ النَّارُ الَّتِي كُنْتُمْ بِهَا تُكَذِّبُونَ
١٥  أَفَسِحْرٌ هَٰذَا أَمْ أَنْتُمْ لَا تُبْصِرُونَ
١٦  اصْلَوْهَا فَاصْبِرُوا أَوْ لَا تَصْبِرُوا سَوَاءٌ عَلَيْكُمْ ۖ إِنَّمَا تُجْزَوْنَ مَا كُنْتُمْ تَعْمَلُونَ
١٧  إِنَّ الْمُتَّقِينَ فِي جَنَّاتٍ وَنَعِيمٍ
١٨  فَاكِهِينَ بِمَا آتَاهُمْ رَبُّهُمْ وَوَقَاهُمْ رَبُّهُمْ عَذَابَ الْجَحِيمِ
١٩  كُلُوا وَاشْرَبُوا هَنِيئًا بِمَا كُنْتُمْ تَعْمَلُونَ
٢٠  مُتَّكِئِينَ عَلَىٰ سُرُرٍ مَصْفُوفَةٍ ۖ وَزَوَّجْنَاهُمْ بِحُورٍ عِينٍ
٢١  وَالَّذِينَ آمَنُوا وَاتَّبَعَتْهُمْ ذُرِّيَّتُهُمْ بِإِيمَانٍ أَلْحَقْنَا بِهِمْ ذُرِّيَّتَهُمْ وَمَا أَلَتْنَاهُمْ مِنْ عَمَلِهِمْ مِنْ شَيْءٍ ۚ كُلُّ امْرِئٍ بِمَا كَسَبَ رَهِينٌ
٢٢  وَأَمْدَدْنَاهُمْ بِفَاكِهَةٍ وَلَحْمٍ مِمَّا يَشْتَهُونَ
٢٣  يَتَنَازَعُونَ فِيهَا كَأْسًا لَا لَغْوٌ فِيهَا وَلَا تَأْثِيمٌ
٢٤  وَيَطُوفُ عَلَيْهِمْ غِلْمَانٌ لَهُمْ كَأَنَّهُمْ لُؤْلُؤٌ مَكْنُونٌ
٢٥  وَأَقْبَلَ بَعْضُهُمْ عَلَىٰ بَعْضٍ يَتَسَاءَلُونَ
٢٦  قَالُوا إِنَّا كُنَّا قَبْلُ فِي أَهْلِنَا مُشْفِقِينَ
٢٧  فَمَنَّ اللَّهُ عَلَيْنَا وَوَقَانَا عَذَابَ السَّمُومِ
٢٨  إِنَّا كُنَّا مِنْ قَبْلُ نَدْعُوهُ ۖ إِنَّهُ هُوَ الْبَرُّ الرَّحِيمُ
٢٩  فَذَكِّرْ فَمَا أَنْتَ بِنِعْمَتِ رَبِّكَ بِكَاهِنٍ وَلَا مَجْنُونٍ
٣٠  أَمْ يَقُولُونَ شَاعِرٌ نَتَرَبَّصُ بِهِ رَيْبَ الْمَنُونِ
٣١  قُلْ تَرَبَّصُوا فَإِنِّي مَعَكُمْ مِنَ الْمُتَرَبِّصِينَ
٣٢  أَمْ تَأْمُرُهُمْ أَحْلَامُهُمْ بِهَٰذَا ۚ أَمْ هُمْ قَوْمٌ طَاغُونَ
٣٣  أَمْ يَقُولُونَ تَقَوَّلَهُ ۚ بَلْ لَا يُؤْمِنُونَ
٣٤  فَلْيَأْتُوا بِحَدِيثٍ مِثْلِهِ إِنْ كَانُوا صَادِقِينَ
٣٥  أَمْ خُلِقُوا مِنْ غَيْرِ شَيْءٍ أَمْ هُمُ الْخَالِقُونَ
٣٦  أَمْ خَلَقُوا السَّمَاوَاتِ وَالْأَرْضَ ۚ بَلْ لَا يُوقِنُونَ
٣٧  أَمْ عِنْدَهُمْ خَزَائِنُ رَبِّكَ أَمْ هُمُ الْمُصَيْطِرُونَ
٣٨  أَمْ لَهُمْ سُلَّمٌ يَسْتَمِعُونَ فِيهِ ۖ فَلْيَأْتِ مُسْتَمِعُهُمْ بِسُلْطَانٍ مُبِينٍ
٣٩  أَمْ لَهُ الْبَنَاتُ وَلَكُمُ الْبَنُونَ
٤٠  أَمْ تَسْأَلُهُمْ أَجْرًا فَهُمْ مِنْ مَغْرَمٍ مُثْقَلُونَ
٤١  أَمْ عِنْدَهُمُ الْغَيْبُ فَهُمْ يَكْتُبُونَ
٤٢  أَمْ يُرِيدُونَ كَيْدًا ۖ فَالَّذِينَ كَفَرُوا هُمُ الْمَكِيدُونَ
٤٣  أَمْ لَهُمْ إِلَٰهٌ غَيْرُ اللَّهِ ۚ سُبْحَانَ اللَّهِ عَمَّا يُشْرِكُونَ
٤٤  وَإِنْ يَرَوْا كِسْفًا مِنَ السَّمَاءِ سَاقِطًا يَقُولُوا سَحَابٌ مَرْكُومٌ
٤٥  فَذَرْهُمْ حَتَّىٰ يُلَاقُوا يَوْمَهُمُ الَّذِي فِيهِ يُصْعَقُونَ
٤٦  يَوْمَ لَا يُغْنِي عَنْهُمْ كَيْدُهُمْ شَيْئًا وَلَا هُمْ يُنْصَرُونَ
٤٧  وَإِنَّ لِلَّذِينَ ظَلَمُوا عَذَابًا دُونَ ذَٰلِكَ وَلَٰكِنَّ أَكْثَرَهُمْ لَا يَعْلَمُونَ
٤٨  وَاصْبِرْ لِحُكْمِ رَبِّكَ فَإِنَّكَ بِأَعْيُنِنَا ۖ وَسَبِّحْ بِحَمْدِ رَبِّكَ حِينَ تَقُومُ
٤٩  وَمِنَ اللَّيْلِ فَسَبِّحْهُ وَإِدْبَارَ النُّجُومِ

 In the name of Allah, the Entirely Merciful, the Especially Merciful.

1  By the mount
2  And [by] a Book inscribed
3  In parchment spread open
4  And [by] the frequented House
5  And [by] the heaven raised high
6  And [by] the sea filled [with fire],
7  Indeed, the punishment of your Lord will occur.
8  Of it there is no preventer.
9  On the Day the heaven will sway with circular motion
10  And the mountains will pass on, departing –
11  Then woe, that Day, to the deniers,
12  Who are in [empty] discourse amusing themselves.
13  The Day they are thrust toward the fire of Hell with a [violent] thrust, [its angels will say],
14  “This is the Fire which you used to deny.
15  Then is this magic, or do you not see?
16  [Enter to] burn therein; then be patient or impatient – it is all the same for you. You are only being recompensed [for] what you used to do.”
17  Indeed, the righteous will be in gardens and pleasure,
18  Enjoying what their Lord has given them, and their Lord protected them from the punishment of Hellfire.
19  [They will be told], “Eat and drink in satisfaction for what you used to do.”
20  They will be reclining on thrones lined up, and We will marry them to fair women with large, [beautiful] eyes.
21  And those who believed and whose descendants followed them in faith – We will join with them their descendants, and We will not deprive them of anything of their deeds. Every person, for what he earned, is retained.
22  And We will provide them with fruit and meat from whatever they desire.
23  They will exchange with one another a cup [of wine] wherein [results] no ill speech or commission of sin.
24  There will circulate among them [servant] boys [especially] for them, as if they were pearls well-protected.
25  And they will approach one another, inquiring of each other.
26  They will say, “Indeed, we were previously among our people fearful [of displeasing Allah].
27  So Allah conferred favor upon us and protected us from the punishment of the Scorching Fire.
28  Indeed, we used to supplicate Him before. Indeed, it is He who is the Beneficent, the Merciful.”
29  So remind [O Muhammad], for you are not, by the favor of your Lord, a soothsayer or a madman.
30  Or do they say [of you], “A poet for whom we await a misfortune of time?”
31  Say, “Wait, for indeed I am, with you, among the waiters.”
32  Or do their minds command them to [say] this, or are they a transgressing people?
33  Or do they say, “He has made it up”? Rather, they do not believe.
34  Then let them produce a statement like it, if they should be truthful.
35  Or were they created by nothing, or were they the creators [of themselves]?
36  Or did they create the heavens and the earth? Rather, they are not certain.
37  Or have they the depositories [containing the provision] of your Lord? Or are they the controllers [of them]?
38  Or have they a stairway [into the heaven] upon which they listen? Then let their listener produce a clear authority.
39  Or has He daughters while you have sons?
40  Or do you, [O Muhammad], ask of them a payment, so they are by debt burdened down?
41  Or have they [knowledge of] the unseen, so they write [it] down?
42  Or do they intend a plan? But those who disbelieve – they are the object of a plan.
43  Or have they a deity other than Allah? Exalted is Allah above whatever they associate with Him.
44  And if they were to see a fragment from the sky falling, they would say, “[It is merely] clouds heaped up.”
45  So leave them until they meet their Day in which they will be struck insensible –
46  The Day their plan will not avail them at all, nor will they be helped.
47  And indeed, for those who have wronged is a punishment before that, but most of them do not know.
48  And be patient, [O Muhammad], for the decision of your Lord, for indeed, you are in Our eyes. And exalt [Allah] with praise of your Lord when you arise.
49  And in a part of the night exalt Him and after [the setting of] the stars.

 奉至仁至慈的真主之名

1  以山岳盟誓,
2  以天经之书
3  写于展开的皮纸者盟誓,
4  以众人朝觐的天房盟誓,
5  以被升起的苍穹盟誓,
6  以汪洋的大海盟誓,
7  你的主的刑罚,确是要实现的,
8  是任何人不能抵抗的。
9  在天体震动,
10  山岳逝去之日,
11  在那日,伤哉否认真理的人们,
12  即以妄言消遣的人们!
13  他们将被投入火狱。
14  这就是你们生前所否认的火刑。
15  这是魔术呢?还是你们看不见呢?
16  你们进火狱去吧!你们忍受其中的刑罚与否,随你们的方便,那对于你们是一样的。你们只受自己行为的报酬。
17  敬畏的人们,必定在乐园和恩泽中,
18  他们因主的赏赐而快乐,他们的主使他们得免于烈火的刑罚。
19  你们因自己的行为而愉快地吃喝吧!
20  他们靠在分列成行的床上,我将以白皙的、美目的女子做他们的伴侣。
21  自己信道,子孙也跟著信道者,我将使他们的子孙与他们同级,我不减少他们的善功一丝毫。每人应对自己的行为负责。
22  我将以他们所嗜好的水果和肉食供给他们,
23  他们在乐园中互递(酒)杯,他们不因而出恶言,也不因而犯罪恶。
24  他们的僮仆轮流著服侍他们,那些僮仆,好象藏在蚌壳里的珍珠一样。
25  于是他们大家走向前来互相谈论。
26  他们将说:以前我们为自己的家属确是战战兢兢的,
27  但真主已施恩于我们,并使我们得免于毒风的刑罚。
28  以前我们的确常常祈祷他,他确是仁爱的,确是至慈的。
29  你应当教诲众人,因为借你的主的恩典,你不是一个占卜者,也不是一个疯人。
30  不然,他们说:他是一个诗人,我们等待他遭逢厄运。
31  你说:你们等待吧!我确是与你们一同等待的。
32  难道他们的理智命令他们说这句话吗?不然,他们是放荡的民众。
33  难道他们说他曾捏造他吗?不然,其实是他们不归信。
34  叫他们作出象这样的文辞来,如果他们是说实话的!
35  是他们从无到有被创造出来呢?还是他们自己就是创造者呢?
36  难道他们曾创造天地吗?不然,是他们不确信真主。
37  是你的主的库藏归他们掌管呢?还是他们是那些库藏的监督呢?
38  难道他们有一架天梯,可以登上去倾听吗?叫他们中的倾听者拿一个明证来吧!
39  难道真主有女儿,你们有儿子吗?
40  难道你向他们索取报酬,故他们为纳税而担负太重?
41  难道他们能知幽玄,故能将它记录下来?
42  难道他们欲用计谋吗?不信道者,将自中其计。
43  难道除真主外,他们还有别的神灵吗?真主是超乎他们所用以配他的。
44  如果他们看见天掉下来一块,他们将说:这是成堆的云彩。
45  你任随他们吧!直到他们遭遇自己被震死的日子。
46  在那日,他们的计谋,对于他们毫无裨益,他们也不受援助。
47  不义的人们,在那日之前,必定要受一种刑罚,但他们大半不知道。
48  你应当忍受你的主的判决,因为你确是在我的眷顾之下的。你起来的时候,应当赞颂你的主;
49  在夜间和在星宿没落之么,你应当赞颂他。

 ¡En el nombre de Alá, el Compasivo, el Misericordioso!

1  ¡Por el Monte!
2  ¡Por una Escritura, puesta por escrito
3  en un pergamino desenrollado!
4  ¡Por la Casa frecuentada!
5  ¡Por la bóveda elevada!
6  ¡Por el mar hinchado!
7  ¡Sí, el castigo de tu Señor tendrá lugar,
8  nadie podrá rechazarlo!
9  El día que el cielo gire vertiginosamente
10  y se pongan las montañas en marcha.
11  Ese día ¡ay de los desmentidores,
12  que parloteaban por pasar el rato!
13  El día que se les empuje, violentamente, al fuego de la gehena:
14  «¡Éste es el fuego que desmentíais!
15  ¿Es, pues, esto magia? ¿O es que no veis claro?
16  ¡Arded en él! Debe daros lo mismo que lo aguantéis o no. Sólo se os retribuye por vuestras obras».
17  Quienes temieron a Alá, en cambio, estarán en jardines y delicia,
18  disfrutando de lo que su Señor les dé. Su Señor les habrá preservado del castigo del fuego de la gehena.
19  «¡Comed y bebed en paz! ¡Por lo que habéis hecho!»
20  Reclinados en lechos alineados. Y les daremos por esposas a huríes de grandes ojos.
21  Reuniremos con los creyentes a los descendientes que les siguieron en la fe. No les menoscabaremos nada sus obras. Cada uno será responsable de lo que haya cometido.
22  Les proveeremos de la fruta y de la carne que apetezcan.
23  Allí se pasarán unos a otros una copa cuyo contenido no incitará a vaniloquio ni a pecado.
24  Para servirles, circularán a su alrededor muchachos como perlas ocultas.
25  Y se volverán unos a otros para preguntarse.
26  Dirán: «Antes vivíamos angustiados en medio de nuestra familia.
27  Alá nos agració y preservó del castigo del viento abrasador.
28  Ya Le invocábamos antes. Es el Bueno, el Misericordioso».
29  ¡Amonesta, pues, porque, por la gracia de tu Señor, no eres adivino ni poseso!
30  O dicen: «¡Un poeta…! ¡Esperaremos las vicisitudes de su sino!»
31  Di: «¡Esperad! Yo espero con vosotros».
32  ¿Se les ordena en sueños que hablen así o es que son gente rebelde?
33  O dicen: «¡Él se lo ha inventado!» ¡No, no creen!
34  Si es verdad lo que dicen, ¡que traigan un relato semejante!
35  ¿Han sido creados de la nada? ¿O son ellos los creadores?
36  ¿O han creado los cielos y la tierra? No, no están convencidos.
37  ¿O tienen los tesoros de tu Señor? ¿O se creen unos potentados?
38  ¿O tienen una escala que les permita escuchar? El que de ellos lo consiga ¡que aporte una autoridad manifesta!
39  ¿O tendrá Él hijas, como vosotros tenéis hijos?
40  ¿O es que les reclamas un salario tal que se vean abrumados de deudas?
41  ¿O es que conocen lo oculto y toman nota?
42  ¿O quieren urdir una estratagema? Los infieles serían sus víctimas.
43  ¿O tienen un dios diferente de Alá? ¡Gloria a Alá, Que está por encima de lo que Le asocian!
44  Si vieran caer parte del cielo, dirían: «Son nubes que se han amontonado».
45  Déjales hasta que les llegue su día, cuando sean fulminados,
46  el día de su estratagema no les sirva de nada y nadie les auxilie.
47  Los impíos sufrirán, además, otro castigo, pero la mayoría no saben.
48  ¡Espera paciente la decisión de tu, Señor, pues te vemos! Y ¡celebra las alabanzas de tu Señor cuando estás de pie!
49  ¡Glorifícale durante la noche y al declinar las estrellas!