This Program is an Individual’s Effort & not an International Conspiracy.

Recitation of the Holy Scripture.

And it is not your wealth or your children that bring you nearer to Us in position, but it is he who believes and done righteousness. For them there will be the double reward for what they did, and they will be in the upper chambers of Paradise, safe [and secure].

And the ones who strive against Our verses to cause [them] failure those will be summoned to the punishment.

Say, “Indeed, my Lord sends down the truth. Knower of the unseen.”

Say, “The truth has come, and falsehood can neither begin anything nor repeat it.”

And if you could see when they are terrified but there is no escape, and they will be seized from a nearby place.

And they will say, “We believe in it!” But how can they attain it from a distant place?

For they had already disbelieved in it before and hurled allegations without seeing, from far away.

And a barrier and prevention will be placed between them and what they desire, as was done before with their kind. Indeed, they were in disturbing doubt.

End of Recitation of the Holy Scripture.

O people this program is very important. By the Will of my Lord soon after this part I will start discussing Science and a little of history and then I will start the Holly scriptures especially Bible and Quran. In Bible Old Testament and more of Pentateuch. I will not tell you Narrations, Traditions and Jurisprudence which you already have with you in loads and tons but will try to solve the confusions and misinterpretations people added or misunderstood in their scriptures. I will not tell you what you already know or have with you but only that which either you do not know Or misunderstood. First I will only talk about general miracles present everywhere in scriptures in every verse. Then by the Will of my Lord I will try to solve major issues regarding scriptures and to give Christians and Muslims the answers of some of their centuries-old issues about which whatever they say but the reality is that they have no satisfactory answers for that.

Then by my Lord’s Will I will try to solve many issues of conflict between Christian creationists, Muslims and modern science. There is always a blame of scientific community and atheists that religious people come with verses from scriptures matching with science after science reach or discover some fact and then religious people give new meanings to the relevant portions of scriptures. And when science says that universe is expanding religious people come with verses like Quran chapter 51verse no 47. While actually scriptures and divine revelations should be the source of guidance for human knowledge and science. But if my Lord Wills soon a time will come when science will get its major guideline from the scriptures to take off and come out of this tight and almost obsolete sphere of human knowledge with which we cannot explore and conquer this universe which is waiting for us.

I already told you that this program is an individual’s effort which is already mentioned in the beginning slide of every program. Not a single person in this whole world helped me in this. All this is augmented reality I created for you. Telling you this so that later in any case you might not think that this is any sort of conspiracy of some Media Group, some company or even some country because of the content, apparent look and availability of this program in many languages. Why I am saying all this is because of two reasons first I have got these type of emails and comments and secondly later in future any one of you might not think like this. If that would be the case and I had much resources this program should have spread much more than this. All this is made by one individual with no other support except God. What do you think is there any chance of conspiracy that someone himself or with the help of some power of this world makes this program and it is a trap or some international conspiracy. How can anyone understand the inner meanings of scriptures just by some conspiracy? This effort is to save humankind and to bring them out from this vicious cycle. Especially Muslims who are deeply enmeshed in ignorance and sectarianism.

As I told you that I know I have less command on language and on how to express. And that my speech is not very decorative and articulate and that I am also a very shy person towards the camera. I have not come in front of cameras like this in my whole life. Further when I started this program I just came out from extensive research and isolation. I told my Lord that “my breast straiteneth, and my tongue moveth not quickly” But because I had to do this and I couldn’t leave my fellow humans in this situation. That’s why I started and did it in whatever manner I could. Despite these shortcomings if my Lord wills he will put my love in your hearts.

I have recognized my Lord by observation and by thinking assuming every being as Lord and then rejecting it on the basis of logic, rationale and wisdom. So it’s not a blind faith. Your Lord is all knowledge all rationale. There is not one percent increase in my faith even if the sky is ripped and all curtains from my eyes and conscious would have been removed. Look at my eyes do you think that I am telling a lie. Again look at my eyes. No by your lord it is the truth.

Recitation of the Holy Scripture.

وما أموالكم ولا أولادكم بالتي تقربكم عندنا زلفى إلا من آمن وعمل صالحا فأولئك لهم جزاء الضعف بما عملوا وهم في الغرفات آمنون

والذين يسعون في آياتنا معاجزين أولئك في العذاب محضرون

قل إن ربي يقذف بالحق علام الغيوب

قل جاء الحق وما يبدئ الباطل وما يعيد

ولو ترى إذ فزعوا فلا فوت وأخذوا من مكان قريب

وقالوا آمنا به وأنى لهم التناوش من مكان بعيد

وقد كفروا به من قبل ويقذفون بالغيب من مكان بعيد

وحيل بينهم وبين ما يشتهون كما فعل بأشياعهم من قبل إنهم كانوا في شك مريب

End of Recitation of the Holy Scripture.

أيُّها النّاس، هذا البرنامج هام جدًّا، بمشيئة ربي بعد هذا الجزء مباشرة سأبدأ بمناقشة العلوم وقليل من التاريخ ثم سأبدأ الكتاب المقدس المقدسة خاصة الكتاب المقدس والقرآن.. في الإنجيل العهد القديم وأكثر عن أسفار موسى الخمسة. لن أحكي لكم الروايات والتقاليد والفقة الذي تعرفونه بالفعل، ولكن سأحاول فقط توضيح الأمور المُحيّرة التي أضافها او أساء فهمها النّاس في كتبهم المُقدّسة، سأخبركم فقط عن مالا تعرفونة او ما أسأتُم فهمه. أوّلا؛ سأتحدّث عمومًا عن المُعجزات التي وردت في كُل آية في الكتب المُقدّسة، ثُم بمشيئة الله سأحاول حلّ بعض القضايا الرئيسيّة المُتعلّقة بالكُتب المُقدّسة، وسأعطي المسلمين والنّصارى إجابات لبعض القضابا القديمة التي إستمرّت لقرون حول ما يقولونة، ولكن الحقيقة هي عدم وجود إجابات مُرضية لذلك.

بعد ذلك بمشيئة الله سأحاول أن أحل العديد من قضايا الخلاف بين المُسلمين والنّصارى والعلم الحديث. دائمًا ما يوجد لوم من المجتمع العلمي والملحدين على أن المُتديّنين يأتون بأياتٍ من الكُتب المُقدّسة تتماثل مع العلم وذلك بعد إكتشاف بعض الحقائقّ العلميّة ثم يعطون معانٍ جديدة لأجزاء ذات صلة في الكتب المُقدّسة، وعندما يقول العلم أن الكون يتوسّع، يأتي الناس المتديّنون بآياتٍ من القرآن مثل الآية رقم (47) في سورة رقم 51 (سورة الذّاريات)، في حين أن الكُتب المُقدّسة والوحي الإلهي ينبغي أن يكونوا مصدرًا للمعرفة والعلم عند الإنسان، ولكن حينما يشاء ربّي قريبًا، سيأتِ الوقت الذي تصبح فيه الكتب المقدّسة هي الدليل الأساسي للعلم حتّى نخرج من هذا المجال المحدود من المعرفة الإنسانيّة إلى مالا يمكننا إستكشافه ولإخضاع هذا الكون الذي ينتظرنا.

سبق وأن أخبرتكُم أن هذا البرنامج يعتبر مجهود لأحد ما ويُذكر في بداية كل حلقة، فلم يساعدني أي شخص في العالم على هذا، وكل هذا يُعزّز حقيقة أنني خُلقت من أجل هذا، أخبركم بذلك الآن حتّى لا تعتقدون لاحقًا في أي حال أن هذا نوع من المؤامرة من بعض وسائل الإعلام وبعض الشّركات أو حتى بعض البلدان وذلك بسبب المحتوى والمظهر الواضح وإتاحة هذا البرنامج بالعديد من اللغات. لماذا أقول هذا؟ لسببين. أوّلًا؛ أننّي تلقّيت هذا النّوع من الرسائل في البريد الإلكتروني والتعليقات. وثانيًا؛ يمكن لأيّ شخص فيكم ألّا يُفكّر بهذة الطّريقة في المُستقبل. في هذة الحالة، فقد قدّمت الكثير من الموارد لهذا البرنامج لذا كان ينبغي أن يكون أكثر إنتشارًا مما هو عليه الآن. هذا العمل صُنع بواسطة شخص واحد فقط بدون أيّ دعم آخر غير الله. ماذا تعتقد هل هناك فرصة للتآمر أن الشّخص نفسه او بمساعدة أيّ قوة في هذا العالم يصنع هذا البرنامج وهو فخّ أو مؤامرة عالميّة ما. كيف يُمكن لأحد أن يفهم المعاني العميقة للكتب المقدّسة فقط من خلال مؤامرة؟ هذا المجهود صُنع لإنقاذ البشريّة وإخراجها من هذة الحلقة المُفرّغة، خاصّة المُسلمين الغارقين في الجهل والطّائفيّة.

كما أخبرتكم من قبل، أعلم أنني لا أُتقن اللغه وكيفيّة التعبير جيّدًا، وأن خطابي ليس مُزخرفًا جيّدًا كما أنّني شخص خجول جدًّا أمام الكاميرا، لم أجلس أمام الكاميرات مثل هذا من قبل في حياتي، وعلاوة على ذلك، عند بدئي لهذا البرنامج، كنت قد خرجت للتوّ من البحث والعُزلة المُمتدّة، فأخبرت الله ” وَيَضِيقُ صَدْرِي وَلا يَنطَلِقُ لِسَانِي”، ولكنّني أضطررت إلى القيام بهذا ولم أستطع أن أترك أخواني على هذا الحال، لهذا السّبب بدأت وقمت بذلك بأي طريقة ممكنة، وعلى الرّغم من هذة المدّة القصيرة، فإذا أراد الله سيضع محبّتي في قلوبكُم.

لقد عرفت ربّي بالتفكير والتمعُّن في خَلقِه، ثُم رفضتّهُ على أساس المنطق والحِكمة، لذا فهذا ليس إيمانًا أعمى، فربّكُم هو العليم الحكيم. لا يوجد زيادة ١% على إيماني، حتّى لو تمزّقت السّماء وأُزيلت السّتائر من على عيني وأختفى الوعي. أنظروا في عيني، هل تعتقدوا أنني لا أخبركم بالحقيقة؟ أنظروا في عيني مُجدّدًا، لا بواسطة ربّكُم. إنّها الحقيقة!

Recitation of the Holy Scripture.

E não é a sua riqueza ou os seus filhos que o aproximam de nós em posição, mas é ele quem acredita e faz justiça. Para eles, haverá a dupla recompensa pelo que eles fizeram, e eles estarão nas câmaras superiores do Paraíso, seguros [e seguros].
E aqueles que se esforçam contra nossos versos para causar-lhes o fracasso aqueles serão convocados para a punição.
Diga: “De fato, meu Senhor envia a verdade. Conhecedor do que não é visto”.
Diga: “A verdade chegou e a falsidade não pode começar nem repeti-la”.
E se você pudesse ver quando eles estão aterrorizados, mas não há escapatória, e eles serão apreendidos em um lugar próximo.
E eles dirão: “Nós acreditamos nisso!” Mas como eles podem alcançá-lo de um lugar distante?
Pois eles já haviam desacreditado antes e jogaram denúncias sem ver, de longe.
E uma barreira e prevenção serão colocadas entre eles e o que eles desejam, como foi feito antes com a sua espécie. De fato, eles estavam em dúvida perturbadora.

End of Recitation of the Holy Scripture.

O povo deste programa é muito importante. Pela Vontade de meu Senhor, logo depois desta parte, começarei a discutir Ciência e um pouco de história e então começarei as Escrituras Sagradas, especialmente a Bíblia e o Alcorão. No Antigo Testamento da Bíblia e mais no Pentateuco. Não lhe direi Narrações, Tradições e Jurisprudência, que você já tem com você em grandes quantidades, mas tentará resolver as confusões e interpretações errôneas que as pessoas acrescentaram ou não entenderam em suas escrituras. Eu não vou te contar o que você já sabe ou tem com você, mas apenas o que você não conhece Ou não entendeu. Primeiro, falarei apenas sobre os milagres gerais presentes em todos os lugares nas escrituras em todos os versos. Então, pela Vontade de meu Senhor, tentarei resolver questões importantes sobre as escrituras e dar aos cristãos e muçulmanos as respostas de algumas questões centenárias sobre as quais, seja o que for que digam, a realidade é que não têm respostas satisfatórias para isso.

Então, pela Vontade do meu Senhor, tentarei resolver muitos problemas de conflito entre criacionistas cristãos, muçulmanos e ciência moderna. Há sempre uma culpa da comunidade científica e dos ateus de que as pessoas religiosas vêm com versículos das escrituras que combinam com a ciência depois que a ciência alcança ou descobre algum fato e então as pessoas religiosas dão novos significados às porções relevantes das escrituras. E quando a ciência diz que o universo está se expandindo, as pessoas religiosas vêm com versículos como o Alcorão, capítulo 47, ao passo que, na verdade, as escrituras e as revelações divinas devem ser a fonte de orientação para o conhecimento e a ciência humanos. Mas se meu Senhor Viver logo chegará um momento em que a ciência obterá sua principal diretriz das escrituras para decolar e sair dessa esfera estreita e quase obsoleta do conhecimento humano com a qual não podemos explorar e conquistar este universo que está esperando por nós .

Eu já lhe disse que este programa é um esforço individual que já é mencionado no slide inicial de cada programa. Nem uma única pessoa em todo o mundo me ajudou nisso. Tudo isso é realidade aumentada que criei para você. Contando-lhe isso para que mais tarde, em qualquer caso, você não pense que isso é algum tipo de conspiração de algum grupo de mídia, alguma empresa ou mesmo algum país por causa do conteúdo, aparência aparente e disponibilidade deste programa em muitos idiomas. Por que eu estou dizendo tudo isso é por causa de duas razões primeiro eu tenho esses tipos de e-mails e comentários e, posteriormente, no futuro, qualquer um de vocês pode não pensar assim. Se esse fosse o caso e eu tivesse muitos recursos, este programa deveria se espalhar muito mais do que isso. Tudo isso é feito por um indivíduo sem outro apoio, exceto Deus. O que você acha que há alguma chance de conspiração que alguém ou com a ajuda de algum poder deste mundo faz este programa e é uma armadilha ou alguma conspiração internacional? Como alguém pode entender os significados internos das escrituras apenas por alguma conspiração? Este esforço é para salvar a humanidade e tirá-los deste ciclo vicioso. Especialmente os muçulmanos que estão profundamente enredados na ignorância e no sectarismo.

Como eu lhe disse, sei que tenho menos domínio sobre a linguagem e sobre como expressar. E que meu discurso não é muito decorativo e articulado e que eu também sou uma pessoa muito tímida em relação à câmera. Eu não vim na frente de câmeras assim em toda a minha vida. Além disso, quando comecei este programa, acabei de sair de uma extensa pesquisa e isolamento. Eu disse ao meu Senhor que “meu peito se estreitou, e minha língua não se moveu depressa”, mas porque eu tinha que fazer isso e não podia deixar meus companheiros nesta situação. É por isso que comecei e fiz da maneira que pude. Apesar dessas deficiências, se meu Senhor quiser, ele colocará meu amor em seus corações.

Eu reconheci meu Senhor pela observação e pelo pensamento assumindo cada ser como Senhor e depois rejeitando-o com base na lógica, na racionalidade e na sabedoria. Então não é uma fé cega. Seu Senhor é todo conhecimento, todo racional. Não há um por cento de aumento na minha fé, mesmo que o céu esteja rasgado e todas as cortinas dos meus olhos e conscientes tenham sido removidas. Olhe para os meus olhos, você acha que estou dizendo uma mentira. Mais uma vez, olhe para os meus olhos. Não pelo seu senhor é a verdade.

Recitation of the Holy Scripture.

Y no es su riqueza ni la de sus hijos lo que los acerca a Nosotros en su posición, sino que es él quien cree y hace justicia. Para ellos habrá una doble recompensa por lo que hicieron, y estarán en las cámaras superiores del Paraíso, seguros [y seguros].
Y los que luchan contra Nuestros versos para causar [ellos] el fracaso serán convocados al castigo.
Diga: “De hecho, mi Señor envía la verdad. Conocedor de lo oculto”.
Diga: “La verdad ha llegado, y la falsedad no puede comenzar ni repitir nada”.
Y si pudieras ver cuando están aterrorizados pero no hay escapatoria, y serán capturados de un lugar cercano.
Y dirán: “¡Creemos en eso!” ¿Pero cómo pueden alcanzarlo desde un lugar distante?
Porque ellos ya habían descreído de ello antes y lanzaron acusaciones sin ver, desde lejos.
Y se colocará una barrera y prevención entre ellos y lo que desean, como se hizo antes con los de su clase. De hecho, estaban en inquietante duda.

End of Recitation of the Holy Scripture.

Oh gente, este programa es muy importante. Por la Voluntad de mi Señor, poco después de esta parte, comenzaré a hablar sobre Ciencia y un poco de historia y luego comenzaré las escrituras de Holly, especialmente la Biblia y el Corán. En el Antiguo Testamento de la Biblia y más de Pentateuco. No te contaré Narraciones, Tradiciones y Jurisprudencia que ya tengas contigo en toneladas y toneladas, pero trataré de resolver las confusiones y malas interpretaciones que las personas agregaron o malinterpretaron en sus escrituras. No te diré lo que ya sabes o tienes contigo, sino solo lo que no sabes o lo que no entiendes. Primero, solo hablaré sobre los milagros generales presentes en todas partes en las Escrituras en cada versículo. Luego, por la Voluntad de mi Señor, trataré de resolver los principales problemas relacionados con las Escrituras y darles a los cristianos y musulmanes las respuestas de algunos de sus temas centenarios sobre lo que digan, pero la realidad es que no tienen respuestas satisfactorias para eso.

Luego, por la voluntad de mi Señor, trataré de resolver muchos problemas de conflicto entre creacionistas cristianos, musulmanes y la ciencia moderna. Siempre hay una culpa de la comunidad científica y los ateos de que las personas religiosas vienen con versículos de las escrituras que coinciden con la ciencia luego de que la ciencia alcanza o descubre algún hecho y luego las personas religiosas le dan un nuevo significado a las porciones relevantes de las escrituras. Y cuando la ciencia dice que el universo se está expandiendo, las personas religiosas vienen con versículos como el capítulo 51 del Corán, que dice no 47. Aunque en realidad las Escrituras y las revelaciones divinas deberían ser la fuente de orientación para el conocimiento humano y la ciencia. Pero si mi Señor Wills pronto llegará un momento en que la ciencia obtendrá su guía principal de las Escrituras para despegar y salir de esta esfera estrecha y casi obsoleta del conocimiento humano con la que no podemos explorar y conquistar este universo que nos está esperando. .

Ya te dije que este programa es un esfuerzo individual que ya se menciona en la diapositiva inicial de cada programa. Ni una sola persona en este mundo entero me ayudó en esto. Todo esto es realidad aumentada que creé para ti. Diciéndole esto para que, más tarde, en cualquier caso, no piense que se trata de una especie de conspiración de algún grupo de medios, alguna empresa o incluso algún país debido al contenido, apariencia aparente y disponibilidad de este programa en muchos idiomas. Por qué digo que todo esto se debe a dos razones, primero tengo este tipo de correos electrónicos y comentarios y, en segundo lugar, en el futuro, cualquiera de ustedes podría no pensar así. Si ese fuera el caso y tuviera muchos recursos, este programa debería haberse extendido mucho más que esto. Todo esto lo hace un individuo sin otro apoyo que Dios. ¿Qué crees que hay alguna posibilidad de conspiración que alguien mismo o con la ayuda de algún poder de este mundo haga de este programa y que sea una trampa o una conspiración internacional? ¿Cómo puede alguien entender los significados internos de las escrituras solo por alguna conspiración? Este esfuerzo es para salvar a la humanidad y sacarlos de este círculo vicioso. Especialmente los musulmanes que están profundamente enredados en la ignorancia y el sectarismo.

Como te dije, sé que tengo menos dominio sobre el lenguaje y sobre cómo expresarlo. Y que mi discurso no es muy decorativo y articulado y que también soy una persona muy tímida con la cámara. No he venido frente a cámaras como esta en toda mi vida. Además, cuando comencé este programa, acabo de salir de una extensa investigación y aislamiento. Le dije a mi Señor que “mi pecho se esfuerza, y mi lengua no se mueve rápidamente”, sino porque tenía que hacer esto y no podía dejar a mis semejantes en esta situación. Es por eso que comencé y lo hice de cualquier manera que pude. A pesar de estas deficiencias, si mi Señor quiere, pondrá mi amor en sus corazones.

Reconocí a mi Señor mediante la observación y el pensamiento asumiendo cada ser como Señor y luego rechazándolo sobre la base de la lógica, la racionalidad y la sabiduría. Entonces no es una fe ciega. Tu Señor es todo conocimiento, todo razonamiento. No hay un aumento del uno por ciento en mi fe, incluso si el cielo está rasgado y todas las cortinas de mis ojos y conscientes hubieran sido eliminadas. Mira mis ojos, ¿crees que estoy mintiendo? Nuevamente mira mis ojos. No, por tu señor, es la verdad.

Recitation of the Holy Scripture.

اور تمہارا مال اور اولاد ایسی چیز نہیں کہ تم کو ہمارا مقرب بنا دیں۔ ہاں جو ایمان لایا اور عمل نیک کرتا رہا۔ ایسے ہی لوگوں کو ان کے اعمال کے سبب دگنا بدلہ ملے گا اور وہ خاطر جمع سے بالاخانوں میں بیٹھے ہوں گے

جو لوگ ہماری آیتوں میں کوشش کرتے ہیں کہ ہمیں ہرا دیں وہ عذاب میں حاضر کئے جائیں گے

کہہ دو کہ میرا پروردگار اوپر سے حق اُتارتا ہے اور وہ غیب کی باتوں کا جاننے والا ہے

کہہ دو کہ حق آچکا اور باطل نہ تو پہلی بار پیدا کرسکتا ہے اور نہ دوبارہ پیدا کرے گا

اور کاش تم دیکھو جب یہ گھبرا جائیں گے تو  بچ نہیں سکیں گے اور نزدیک ہی سے پکڑ لئے جائیں گے

اور کہیں گے کہ ہم اس پر ایمان لے آئے اور (اب) اتنی دور سے ان کا ہاتھ ایمان کے لینے کو کیونکر پہنچ سکتا ہے

اور پہلے تو اس سے انکار کرتے رہے اور بن دیکھے دور ہی سے ظن کے تیر چلاتے رہے

اور ان میں اور ان کی خواہش کی چیزوں میں پردہ حائل کردیا گیا جیسا کہ پہلے ان کے ہم جنسوں سے کیا گیا وہ بھی الجھن میں ڈالنے والے شک میں پڑے ہوئے تھے

End of Recitation of the Holy Scripture.

اے لوگو، یہ پروگرام بہت اہم ہے۔  میرے خداوند کی مرضی سے جلد ہی اس حصے کے بعد میں سائنس اور کچھ تاریخ پر بات چیت کروں گا اور اس کے بعد جلد ہی  میں مقدس صحیفوں پر بحث کا آغا ز کروں گا  خصوصاًبائبل اور قران پر ۔  بائبل  کے پرانے عہد نامے  میں سے اور ذیادہ تر پہلی پانچ کتابوں میں سے۔ میں آپ کو  بیانات، روایات اور  شریعت  نہیں بتاؤں گا جنکا آپ کے پاس پہلے سے ہی انبار موجود ہے بلکہ میں ان پیچیدگیوں اور  غلط تشریحات کو  سلجھانے کی کو شش کروں گا جنکو لوگوں نے اپنے صحائف  میں  شامل کر لیا  ہے یا انہیں سمجھنے میں غلطی کی ہے ۔  میں آ پکو وہ نہیں بتاؤں گا جو آپ پہلے سے جانتے ہیں اور جو آپ کے پاس پہلے سے موجود ہے  بلکہ وہ بتاؤں کا جسکا یا تو آپ کو علم نہیں ہے یا جسے آپ درست طور پر سمجھ نہیں پائے۔  پہلے میں  محض ان معجزات کے متعلق بات کروں گا جو صحائف میں ہر جگہ ہر آیت میں موجود ہیں ۔ اور پھر اپنے خداوند کی مرضی سےمیں کوشش کروں گا  کہ صحائف سے  متعلق اہم مسائل کو حل کروں  اور مسیحیوں اور مسلمانوں کو  ان کے  صدیوں پرانے مسائل کے جوابات دوں جسکے بارے میں وہ کچھ بھی کہتے ہیں لیکن ان کے پاس کوئی تسلی بخش جواب موجود نہیں ہے۔

پھر اپنے رب کی مرضی سے میں تفرقے کے ان کئی مسائل کو حل کرنے کی کوشش کروں گا جو مسلمانوں، مسیحی تخلیق کاروں اور جدید سائنس کے درمیان موجود ہیں ۔  سائنسی اور  ملحد  گروہ کی جانب سے ہمیشہ سے یہ  الزام رہا ہے کہ جب بھی سائنس کوئی حقیقت دریافت کرتی ہے تو مذہبی لوگ ہمیشہ  اسے صحائف سے جوڑ کر  ان متعلقہ صحیفوں  کو نئے معنی دینے کی کوشش کرتے ہیں ۔  اور جب سائنس کہتی ہے کہ کائنات وسیع ہو  رہی ہے تو مذہبی لوگ آیات کے ساتھ پہنچ جاتے ہیں جیسے کہ قران سورہ 51 آیت 47۔  تاہم درحقیقت صحائف اور الٰہی وحی  انسانی علم اور سائنس کی رہنمائی کے لئے ہونے چاہئیں ۔  لیکن میرے رب کی مرضی سے وہ دور آئے گا جب سائنس اپنی  مرکزی رہنمائی صحائف سے حاصل کرے گی اور  انسانی علم کے اس  محدود اور تنگ حصار سے باہر آئے گی  جس  سے ہم اس کائنات کو نہ تو سمجھ سکتے ہیں نہ ہی اسے جیت سکتے ہیں  جو ہمارے انتظار میں ہے۔

میں آپ کو پہلے ہی بتا چکا ہوں کہ یہ پروگرام ایک   فرد کی جدوجہد ہے جو ہر پروگرام کے آغاز میں پہلی سلائیڈ میں دکھائی جاتی ہے۔ دنیا میں کسی بھی شخص نے اس میں میری مدد نہیں کی۔  یہ تمام ایک مصنوعی حقیقت ہے جو میں نے آپ کے لئے تخلیق کی ہے۔  میں آپ کو یہ اس لئے بتا رہا ہوں کہ اس پروگرام کا مواد ، ظاہری شکل  اور بہت سی زبانوں میں دستیابی سے بعد میں کبھی آپ کو یہ خیال نہ آئے کہ یہ  کسی میڈیا گروپ ، کسی ملک یا کسی  کمپنی کی کوئی سازش ہے۔ میں یہ سب دو وجوہات کی بناء پر کہہ رہا ہوں ۔  پہلا کیونکہ مجھے اس قسم کی ای میلز اور رائے موصول ہوئی ہیں  اور دوسرا ، کہ مستقبل میں کوئی اور ایسا نہ سوچے۔ اگر ایسا ہوتا تو میرے پاس کہیں ذیادہ وسائل ہوتے اور میرا پروگرام  اس سے کہیں ذیادہ  دنیا میں پھیل چکا ہوتا۔  یہ تمام ایک شخص کی کاوش ہے  جس میں خدا کے سوائے کسی اور کی کوئی مدد شامل نہیں ہے۔  آپ کیا سوچتے ہیں کہ اس میں سازش کا کوئی امکا ن ہے کہ ایک شخص خود سے یا دنیا  کی مدد سے  یہ پروگرام  تیار کرتا ہےاور یہ کوئی پھندا ہے یا کوئی بین الاقوامی سازش؟   کیسے کوئی محض سازش کے تحت صحیفوں کے گہرے معنی سمجھ سکتا ہے؟  یہ  بنی نوع انسان کو بچانے  اور اس گھنونے چکر سے نکالنے کی ایک کاوش ہے ۔ خاص کر مسلمانوں کو  جو جہالت اور فرقہ واریت میں بُری طرح سے جکڑے ہوئے ہیں ۔

جیسا کہ میں نے آپ کو بتایا تھا کہ میں جانتا ہوں کہ  زبان پر اور  خود کے اظہار پر مجھے اتنی مہارت حاصل نہیں ہے۔ اور یہ کہ میری تقریر اتنی شاندار  اور واضح نہیں ہے اور یہ بھی کہ میں کیمرے کے سامنے  اتنا خود اعتماد نہیں ہوں ۔ اپنی تمام زندگی میں مَیں کبھی اس طرح سے کیمرے کے سامنے نہیں آیا۔  مزید جب میں نے یہ پروگرام شروع کیا تو  میں  وسیع تحقیق اور تنہائ سے باہر آیا تھا۔ میں نے اپنے خداوند کو کہا ” میرا سینہ تنگ ہوتا ور میری زبان لڑکھڑاتی ہے”۔  لیکن چونکہ مجھے یہ کرنا تھا اور میں اپنے ساتھی انسانوں کو ایسے ہی اس صورتحال میں  نہیں چھوڑ سکتا تھا۔  اس لئے میں نے اس کا  آغاز  جیسے بھی ہو سکتا تھا کیا۔  ان سب کمزوریوں کے باوجود اگر میرے خداوند کی مرضی ہوئی تو وہ میری محبت آپ کے دِلوں میں  ڈالے گا۔

میں نے اپنے خداوند کو مشاہدے سے  اور خداوند کے  طور پر  ہر چیز کو تصور کرتے ہوئے اور پھر منطق ، دلیل اور حکمت سے اسے رد کرتے ہوئے پہچا نا ہے ۔ لہٰذا یہ اندھا ایمان نہیں ہے۔  ہمارا خدا صادق اور سب جاننے والا ہے۔  میرے ایمان میں ایک فیصد کا بھی اضافہ نہیں ہوگا چاہے آسمان پھٹ جائے اور میری آنکھوں اور شعور پر سے تمام پردے ہٹا دیے جائیں۔ ۔  میری آنکھوں میں دیکھئے ۔ کیا آپ کو لگتا ہے کہ میں جھوٹ بول رہا ہوں ۔ دوبارہ میری آنکھوں میں دیکھئے۔  نہیں آپ کے رب کی قسم یہ سچ ہے۔