Project Description

AL MUDDATHIR

شروع الله کا نام لے کر جو بڑا مہربان نہایت رحم والا ہے

۱  اے (محمدﷺ) جو کپڑا لپیٹے پڑے ہو
۲  اُٹھو اور ہدایت کرو
۳  اور اپنے پروردگار کی بڑائی کرو
۴  اور اپنے کپڑوں کو پاک رکھو
۵  اور ناپاکی سے دور رہو
۶  اور (اس نیت سے) احسان نہ کرو کہ اس سے زیادہ کے طالب ہو
۷  اور اپنے پروردگار کے لئے صبر کرو
۸  جب صور پھونکا جائے گا
۹  وہ دن کا مشکل دن ہوگا
۱۰  (یعنی) کافروں پر آسان نہ ہوگا
۱۱  ہمیں اس شخص سے سمجھ لینے دو جس کو ہم نے اکیلا پیدا کیا
۱۲  اور مال کثیر دیا
۱۳  اور (ہر وقت اس کے پاس) حاضر رہنے والے بیٹے دیئے
۱۴  اور ہر طرح کے سامان میں وسعت دی
۱۵  ابھی خواہش رکھتا ہے کہ اور زیادہ دیں
۱۶  ایسا ہرگز نہیں ہوگا۔ یہ ہماری آیتیں کا دشمن رہا ہے
۱۷  ہم اسے صعود پر چڑھائیں گے
۱۸  اس نے فکر کیا اور تجویز کی
۱۹  یہ مارا جائے اس نے کیسی تجویز کی
۲۰  پھر یہ مارا جائے اس نے کیسی تجویز کی
۲۱  پھر تامل کیا
۲۲  پھر تیوری چڑھائی اور منہ بگاڑ لیا
۲۳  پھر پشت پھیر کر چلا اور (قبول حق سے) غرور کیا
۲۴  پھر کہنے لگا کہ یہ تو جادو ہے جو (اگلوں سے) منتقل ہوتا آیا ہے
۲۵  (پھر بولا) یہ (خدا کا کلام نہیں بلکہ) بشر کا کلام ہے
۲۶  ہم عنقریب اس کو سقر میں داخل کریں گے
۲۷  اور تم کیا سمجھے کہ سقر کیا ہے؟
۲۸  (وہ آگ ہے کہ) نہ باقی رکھے گی اور نہ چھوڑے گی
۲۹  اور بدن جھلس کر سیاہ کردے گی
۳۰  اس پر اُنیس داروغہ ہیں
۳۱  اور ہم نے دوزخ کے داروغہ فرشتے بنائے ہیں۔ اور ان کا شمار کافروں کی آزمائش کے لئے مقرر کیا ہے (اور) اس لئے کہ اہل کتاب یقین کریں اور مومنوں کا ایمان اور زیادہ ہو اور اہل کتاب اور مومن شک نہ لائیں۔ اور اس لئے کہ جن لوگوں کے دلوں میں (نفاق کا) مرض ہے اور (جو) کافر (ہیں) کہیں کہ اس مثال (کے بیان کرنے) سے خدا کا مقصد کیا ہے؟ اسی طرح خدا جس کو چاہتا ہے گمراہ کرتا ہے اور جس کو چاہتا ہے ہدایت کرتا ہے اور تمہارے پروردگار کے لشکروں کو اس کے سوا کوئی نہیں جانتا۔ اور یہ تو بنی آدم کے لئے نصیحت ہے
۳۲  ہاں ہاں (ہمیں) چاند کی قسم
۳۳  اور رات کی جب پیٹھ پھیرنے لگے
۳۴  اور صبح کی جب روشن ہو
۳۵  کہ وہ (آگ) ایک بہت بڑی (آفت) ہے
۳۶  (اور) بنی آدم کے لئے مؤجب خوف
۳۷  جو تم میں سے آگے بڑھنا چاہے یا پیچھے رہنا چاہے
۳۸  ہر شخص اپنے اعمال کے بدلے گرو ہے
۳۹  مگر داہنی طرف والے (نیک لوگ)
۴۰  (کہ) وہ باغہائے بہشت میں (ہوں گے اور) پوچھتے ہوں گے
۴۱  (یعنی آگ میں جلنے والے) گنہگاروں سے
۴۲  کہ تم دوزخ میں کیوں پڑے؟
۴۳  وہ جواب دیں گے کہ ہم نماز نہیں پڑھتے تھے
۴۴  اور نہ فقیروں کو کھانا کھلاتے تھے
۴۵  اور اہل باطل کے ساتھ مل کر (حق سے) انکار کرتے تھے
۴۶  اور روز جزا کو جھٹلاتے تھے
۴۷  یہاں تک کہ ہمیں موت آگئی
۴۸  (تو اس حال میں) سفارش کرنے والوں کی سفارش ان کے حق میں کچھ فائدہ نہ دے گی
۴۹  ان کو کیا ہوا ہے کہ نصیحت سے روگرداں ہو رہے ہیں
۵۰  گویا گدھے ہیں کہ بدک جاتے ہیں
۵۱  (یعنی) شیر سے ڈر کر بھاگ جاتے ہیں
۵۲  اصل یہ ہے کہ ان میں سے ہر شخص یہ چاہتا ہے کہ اس کے پاس کھلی ہوئی کتاب آئے
۵۳  ایسا ہرگز نہیں ہوگا۔ حقیقت یہ ہے کہ ان کو آخرت کا خوف ہی نہیں
۵۴  کچھ شک نہیں کہ یہ نصیحت ہے
۵۵  تو جو چاہے اسے یاد رکھے
۵۶  اور یاد بھی تب ہی رکھیں گے جب خدا چاہے۔ وہی ڈرنے کے لائق اور بخشش کا مالک ہے

 بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَٰنِ الرَّحِيمِ

١  يَا أَيُّهَا الْمُدَّثِّرُ
٢  قُمْ فَأَنْذِرْ
٣  وَرَبَّكَ فَكَبِّرْ
٤  وَثِيَابَكَ فَطَهِّرْ
٥  وَالرُّجْزَ فَاهْجُرْ
٦  وَلَا تَمْنُنْ تَسْتَكْثِرُ
٧  وَلِرَبِّكَ فَاصْبِرْ
٨  فَإِذَا نُقِرَ فِي النَّاقُورِ
٩  فَذَٰلِكَ يَوْمَئِذٍ يَوْمٌ عَسِيرٌ
١٠  عَلَى الْكَافِرِينَ غَيْرُ يَسِيرٍ
١١  ذَرْنِي وَمَنْ خَلَقْتُ وَحِيدًا
١٢  وَجَعَلْتُ لَهُ مَالًا مَمْدُودًا
١٣  وَبَنِينَ شُهُودًا
١٤  وَمَهَّدْتُ لَهُ تَمْهِيدًا
١٥  ثُمَّ يَطْمَعُ أَنْ أَزِيدَ
١٦  كَلَّا ۖ إِنَّهُ كَانَ لِآيَاتِنَا عَنِيدًا
١٧  سَأُرْهِقُهُ صَعُودًا
١٨  إِنَّهُ فَكَّرَ وَقَدَّرَ
١٩  فَقُتِلَ كَيْفَ قَدَّرَ
٢٠  ثُمَّ قُتِلَ كَيْفَ قَدَّرَ
٢١  ثُمَّ نَظَرَ
٢٢  ثُمَّ عَبَسَ وَبَسَرَ
٢٣  ثُمَّ أَدْبَرَ وَاسْتَكْبَرَ
٢٤  فَقَالَ إِنْ هَٰذَا إِلَّا سِحْرٌ يُؤْثَرُ
٢٥  إِنْ هَٰذَا إِلَّا قَوْلُ الْبَشَرِ
٢٦  سَأُصْلِيهِ سَقَرَ
٢٧  وَمَا أَدْرَاكَ مَا سَقَرُ
٢٨  لَا تُبْقِي وَلَا تَذَرُ
٢٩  لَوَّاحَةٌ لِلْبَشَرِ
٣٠  عَلَيْهَا تِسْعَةَ عَشَرَ
٣١  وَمَا جَعَلْنَا أَصْحَابَ النَّارِ إِلَّا مَلَائِكَةً ۙ وَمَا جَعَلْنَا عِدَّتَهُمْ إِلَّا فِتْنَةً لِلَّذِينَ كَفَرُوا لِيَسْتَيْقِنَ الَّذِينَ أُوتُوا الْكِتَابَ وَيَزْدَادَ الَّذِينَ آمَنُوا إِيمَانًا ۙ وَلَا يَرْتَابَ الَّذِينَ أُوتُوا الْكِتَابَ وَالْمُؤْمِنُونَ ۙ وَلِيَقُولَ الَّذِينَ فِي قُلُوبِهِمْ مَرَضٌ وَالْكَافِرُونَ مَاذَا أَرَادَ اللَّهُ بِهَٰذَا مَثَلًا ۚ كَذَٰلِكَ يُضِلُّ اللَّهُ مَنْ يَشَاءُ وَيَهْدِي مَنْ يَشَاءُ ۚ وَمَا يَعْلَمُ جُنُودَ رَبِّكَ إِلَّا هُوَ ۚ وَمَا هِيَ إِلَّا ذِكْرَىٰ لِلْبَشَرِ
٣٢  كَلَّا وَالْقَمَرِ
٣٣  وَاللَّيْلِ إِذْ أَدْبَرَ
٣٤  وَالصُّبْحِ إِذَا أَسْفَرَ
٣٥  إِنَّهَا لَإِحْدَى الْكُبَرِ
٣٦  نَذِيرًا لِلْبَشَرِ
٣٧  لِمَنْ شَاءَ مِنْكُمْ أَنْ يَتَقَدَّمَ أَوْ يَتَأَخَّرَ
٣٨  كُلُّ نَفْسٍ بِمَا كَسَبَتْ رَهِينَةٌ
٣٩  إِلَّا أَصْحَابَ الْيَمِينِ
٤٠  فِي جَنَّاتٍ يَتَسَاءَلُونَ
٤١  عَنِ الْمُجْرِمِينَ
٤٢  مَا سَلَكَكُمْ فِي سَقَرَ
٤٣  قَالُوا لَمْ نَكُ مِنَ الْمُصَلِّينَ
٤٤  وَلَمْ نَكُ نُطْعِمُ الْمِسْكِينَ
٤٥  وَكُنَّا نَخُوضُ مَعَ الْخَائِضِينَ
٤٦  وَكُنَّا نُكَذِّبُ بِيَوْمِ الدِّينِ
٤٧  حَتَّىٰ أَتَانَا الْيَقِينُ
٤٨  فَمَا تَنْفَعُهُمْ شَفَاعَةُ الشَّافِعِينَ
٤٩  فَمَا لَهُمْ عَنِ التَّذْكِرَةِ مُعْرِضِينَ
٥٠  كَأَنَّهُمْ حُمُرٌ مُسْتَنْفِرَةٌ
٥١  فَرَّتْ مِنْ قَسْوَرَةٍ
٥٢  بَلْ يُرِيدُ كُلُّ امْرِئٍ مِنْهُمْ أَنْ يُؤْتَىٰ صُحُفًا مُنَشَّرَةً
٥٣  كَلَّا ۖ بَلْ لَا يَخَافُونَ الْآخِرَةَ
٥٤  كَلَّا إِنَّهُ تَذْكِرَةٌ
٥٥  فَمَنْ شَاءَ ذَكَرَهُ
٥٦  وَمَا يَذْكُرُونَ إِلَّا أَنْ يَشَاءَ اللَّهُ ۚ هُوَ أَهْلُ التَّقْوَىٰ وَأَهْلُ الْمَغْفِرَةِ

 In the name of Allah, the Entirely Merciful, the Especially Merciful.

1  O you who covers himself [with a garment],
2  Arise and warn
3  And your Lord glorify
4  And your clothing purify
5  And uncleanliness avoid
6  And do not confer favor to acquire more
7  But for your Lord be patient.
8  And when the trumpet is blown,
9  That Day will be a difficult day
10  For the disbelievers – not easy.
11  Leave Me with the one I created alone
12  And to whom I granted extensive wealth
13  And children present [with him] 14  And spread [everything] before him, easing [his life].
15  Then he desires that I should add more.
16  No! Indeed, he has been toward Our verses obstinate.
17  I will cover him with arduous torment.
18  Indeed, he thought and deliberated.
19  So may he be destroyed [for] how he deliberated.
20  Then may he be destroyed [for] how he deliberated.
21  Then he considered [again];
22  Then he frowned and scowled;
23  Then he turned back and was arrogant
24  And said, “This is not but magic imitated [from others].
25  This is not but the word of a human being.”
26  I will drive him into Saqar.
27  And what can make you know what is Saqar?
28  It lets nothing remain and leaves nothing [unburned],
29  Blackening the skins.
30  Over it are nineteen [angels].
31  And We have not made the keepers of the Fire except angels. And We have not made their number except as a trial for those who disbelieve – that those who were given the Scripture will be convinced and those who have believed will increase in faith and those who were given the Scripture and the believers will not doubt and that those in whose hearts is hypocrisy and the disbelievers will say, “What does Allah intend by this as an example?” Thus does Allah leave astray whom He wills and guides whom He wills. And none knows the soldiers of your Lord except Him. And mention of the Fire is not but a reminder to humanity.
32  No! By the moon
33  And [by] the night when it departs
34  And [by] the morning when it brightens,
35  Indeed, the Fire is of the greatest [afflictions] 36  As a warning to humanity –
37  To whoever wills among you to proceed or stay behind.
38  Every soul, for what it has earned, will be retained
39  Except the companions of the right,
40  [Who will be] in gardens, questioning each other
41  About the criminals,
42  [And asking them], “What put you into Saqar?”
43  They will say, “We were not of those who prayed,
44  Nor did we used to feed the poor.
45  And we used to enter into vain discourse with those who engaged [in it],
46  And we used to deny the Day of Recompense
47  Until there came to us the certainty.”
48  So there will not benefit them the intercession of [any] intercessors.
49  Then what is [the matter] with them that they are, from the reminder, turning away
50  As if they were alarmed donkeys
51  Fleeing from a lion?
52  Rather, every person among them desires that he would be given scriptures spread about.
53  No! But they do not fear the Hereafter.
54  No! Indeed, the Qur’an is a reminder
55  Then whoever wills will remember it.
56  And they will not remember except that Allah wills. He is worthy of fear and adequate for [granting] forgiveness.

 奉至仁至慈的真主之名

1  盖被的人啊!
2  你应当起来,你应当警告,
3  你应当颂扬你的主宰,
4  你应当洗涤你的衣服,
5  你应当远离污秽,
6  你不要施恩而求厚报,
7  你应当为你的主而坚忍。
8  当号角被吹向的时候,
9  在那时,将有一个艰难的日子。
10  那个日子对不信道的人们,是不容易渡过的。
11  你让我独自处治我所创造的那个人吧!
12  我赏赐他丰富的财产,
13  和在跟前的子嗣,
14  我提高了他的声望,
15  而他还冀望我再多加赏赐。
16  绝不然,他确实是反对我的迹象的,
17  我将使他遭受苦难。
18  他碓已思考,确已计划。
19  但无论他怎样计划,他是被弃绝的。
20  无论他怎样计划,他终是被弃绝的。
21  他看一看,
22  然后皱眉蹙额,
23  然后高傲地转过身去,
24  而且说:这只是传习的魔术,
25  这只是凡人的言辞。
26  我将使他堕入火狱,
27  你怎能知道火狱是什么?
28  它不让任何物存在,不许任何物留下,
29  它烧灼肌肤。
30  管理它的,共计十九名。
31  我只将管理火狱的成天神,我只以他们的数目,考验不信道的人们,以便曾受天经的人们认清,而信道的人们更加笃信;以免曾受天经的人们和信道的人们怀疑;以便心中有病者和不信道者说:真主设这个譬喻做什么?真主这样使他所意欲的人误入迷途,使他所意欲的人遵循正路。只有你的主,能知道他的军队,这只是人类的教训。
32  真的,以月亮盟誓,
33  以逝去的黑夜盟誓,
34  以显照的黎明盟誓,
35  火狱确是一个大难,
36  可以警告人类,
37  警告你们中欲前进者或欲后退者;
38  各人将因自己的营谋而作抵押,
39  惟幸福的人们除外。
40  他们在乐园中互相询问,
41  问犯罪人们的情状,
42  你们为什么堕入火狱呢?
43  他们说:我们没有礼拜,
44  也没有济贫,
45  我们与妄言的人们一道妄言,
46  我们否认报应日,
47  一直到死亡降临了我们。
48  说情者的说情,将无益於他们。
49  他们怎么退避这教训呢?
50  他们好像一群惊慌的驴子,
51  刚逃避了一只狮子一样。
52  不然,他们中的每个人都希望获得一些展开的天经。
53  绝不然,他们不畏惧后世!
54  真的,这《古兰经》确是一个教诲!
55  谁愿意,谁记忆它,
56  他们只因真主的意欲而记忆它。他是应受敬畏的,他是宜於赦宥的。

 ¡En el nombre de Alá, el Compasivo, el Misericordioso!

1  ¡Tú, el envuelto en un manto!
2  ¡Levántate y advierte!
3  A tu Señor, ¡ensálzale!
4  Tu ropa, ¡purifícala!
5  La abominación, ¡huye de ella!
6  ¡No des esperando ganancia!
7  La decisión de tu Señor, ¡espérala paciente!
8  Cuando suene la trompeta,
9  ése será, entonces, un día difícil
10  para los infieles, no fácil.
11  ¡Déjame solo con Mi criatura,
12  a quien he dado una gran hacienda,
13  e hijos varones que están presentes!
14  Todo se lo he facilitado,
15  pero aún anhela que le dé más.
16  ¡No! Se ha mostrado hostil a Nuestros signos.
17  Le haré subir por una cuesta.
18  Ha reflexionado y tomado una decisión,
19  pero ¡qué decisión! ¡Maldito sea!
20  Sí, ¡qué decisión! ¡Maldito sea!
21  Luego, ha mirado.
22  Luego, se ha puesto ceñudo y triste.
23  Luego, ha vuelto la espalda, lleno de altivez.
24  Y ha dicho: «¡Esto no es sino magia aprendida!
25  ¡No es sino la palabra de un mortal!»
26  ¡Lo entregaré al ardor del saqar !
27  Y ¿cómo sabrás qué es el saqar ?
28  No deja residuos, no deja nada.
29  Abrasa al mortal.
30  Hay diecinueve que lo guardan.
31  No hemos puesto sino a ángeles como guardianes del Fuego y no los hemos puesto en ese número sino para tentar a los infieles, para que los que han recibido la Escritura crean firmemente, para que los creyentes se fortifiquen en su fe, para que no duden ni los que han recibido la Escritura ni los creyentes, para que los enfermos de corazón y los infieles digan: «¿Qué es lo que se propone Alá con esta parábola?» Así es como Alá extravía a quien Él quiere y dirige a quien Él quiere. Nadie sino Él conoce las legiones de tu Señor. No es sino una amonestación dirigida a los mortales.
32  ¡No! ¡Por la luna!
33  ¡Por la noche cuando declina!
34  ¡Por la mañana cuando apunta!
35  Es, sí, una de las mayores,
36  a modo de advertencia para los mortales,
37  para aquéllos de vosotros que quieran adelantarse o rezagarse.
38  Cada uno será responsable de lo que haya cometido.
39  Pero los de la derecha,
40  en jardines, se preguntarán unos a otros
41  acerca de los pecadores.
42  «¿Qué es lo que os ha conducido al saqar ?»
43  Dirán: «No éramos de los que oraban,
44  no dábamos de comer al pobre,
45  parloteábamos con los parlones
46  y desmentíamos el día del Juicio,
47  hasta que vino a nosotros la cierta».
48  Los intercesores no podrán hacer nada por ellos.
49  ¿Por qué han tenido que apartarse del Recuerdo,
50  como asnos espantados
51  que huyen del león?
52  Todos ellos quisieran que se les trajeran hojas desplegadas.
53  Pero ¡no! No temen la otra vida.
54  ¡No! Es un Recuerdo,
55  que recordará quien quiera.
56  Pero no lo tendrán en cuenta, a menos que Alá quiera. Es digno de ser temido y digno de perdonar.